Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / دراندازی ‘ سرحد پار کے حملے روکے جانے چاہئیں

دراندازی ‘ سرحد پار کے حملے روکے جانے چاہئیں

سامبا میںآئی ٹی بی پی کے نئے تعمیر شدہ کیمپ کی افتتاحی تقریب سے مرکزی وزیر داخلہ کا خطاب
سامبا ( جموں و کشمیر) ۔21ستمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان اور چین کو واضح پیغام دیتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے آج کہا کہ دہشت گردی ‘ دراندازی اور سرحد پار سے حملوں کو فوری روک دیا جانا چاہیئے تاکہ ہندوستان کے ساتھ تعلقات بہتر ہوسکے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان ہمیشہ  اپنے تمام پڑوسیوں کے ساتھ بہتر تعلقات کا خواہاں رہا ہے اور اس نے کسی بھی قسم کے ’’ توسیع پسندانہ عزائم ‘‘ کو پروان نہیں چڑھایا ۔ وہ سامبا میں انڈو ۔ تبتن بارڈر پولیس ( آئی ٹی بی پی ) کے نئے تعمیر شدہ کیمپ کی تقریب افتتاح میں فوجیوں سے خطاب کررہے تھے ۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں اس کے خلاف پاکستان کی سرزمین سے کی جانے والی دہشت گرد کارروائیوں پر شدید اندیشے ظاہر کئے ہیں ۔ علاوہ ازیں بار بار دراندازی کی کوششیں کی جاتی رہی ہیں ۔ جنگ بندی کی کئی بارخلاف ورزی ہوچکی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم چین اور پاکستان سے بہتر تعلقات چاہتے ہیں ۔ امن ایشیاء میں اُس وقت تک قائم نہیں ہوسکتا جب تک کہ برصغیر ترقی اور خوشحالی کے راستے پر گامزن نہ ہو اور ہندستان کے ساتھ پڑوسی ممالک کے تعلقات بہتر نہ ہوجائیں ۔ مرکزی وزیر داخلہ نے کہا کہ چاہے یہ سرحدی تنازعات کا سوال ہو یا دہشت گردی کے مسائل کا اُن کا احساس ہے کہ تمام مسائل کی مذاکرات کے ذریعہ یکسوئی ممکن ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان ایک امن پسند ملک ہے ۔ یہ صرف اپنی سرحدوں کا تحفظ کرنا چاہتا ہے ۔ راجناتھ سنگھ تین روزہ دورہ پر ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں کبھی بھی توسیع عزائم پروان نہیں چڑھائے اور نہ مستقبل میں ایسا کرنا چاہتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم پوری دنیا کو ’’ واسودیو کٹمبکم ‘‘ کا پیغام دینا چاہتے ہیں ۔ پوری دنیا ایک خاندان ہے اس کی وجہ سے ہم ہر ایک ساتھ خوشگوار تعلقات چاہتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT