Friday , June 22 2018
Home / ہندوستان / دراندازی کے وقت چینی صدر کی ’ڈھوکلا ‘سے تواضع

دراندازی کے وقت چینی صدر کی ’ڈھوکلا ‘سے تواضع

نئی دہلی 18 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام ) وزیر اعظم نریندر مودی چینی صدر ژی جنگ پنگ کی ’ڈھوکلا ‘ سے تواضع کرتے رہے جبکہ اُس ملک کی طرف سے در اندازیاں جاری رہی،کانگریس قائدین نے آج یہ بات کہتے ہوئے بی جے پی اور مودی پر طنز کیا۔ یہ طنز ظاہر ہے یوپی اے حکومت کے خلاف مودی کے الزام کا جواب ہے کہ وہ وزیراعظم پاکستان کی ’’بریانی‘‘سے تواضع کررہی تھی جبکہ سرحد پر سیزفائر کی خلاف ورزیاں ہورہی تھیں۔’’ہمارے جوان چین کی جانب سے فائرنگ میں زخمی ہوئے ہیں اور ہمارے وزیر اعظم چینی صدر کی ڈھوکلا سے تواضع کررہے ہیں۔کیا یہی ہے جسے 56 انچ کا سینہ کہتے ہیں؟‘‘ یوتھ کانگریس سربراہ راجیو ساتوو نے ٹوئٹر پر یہ بات کہی۔ ایک اور ٹوئٹ میں انہوں نے کہا، ’’ایک طرف چین ہماری سرحدوں میں سڑکیں تعمیر کرنے پر اٹل ہے اور دوسری طرف وہ ہند۔ ویتنام معاہدے کو خطرے میں ڈال رہے ہیں۔ کیوں 56 انچ سکڑ کر 56 ایم ایم ہوگئے؟‘‘ اے آئی سی سی جنرل سکریٹری اور پارٹی ترجمان شکیل احمد نے بی جے پی کو پاکستان کی جانب سے فائر بندی کی خلاف ورزیوں کے مسئلہ کے تئیں ’’رویہ میں تبدیلی‘‘کا مورد الزام ٹہرایا۔ احمدنے ٹوئٹ کیا کہ قوم پاکستان کی سیز فائر خلاف ورزیوں اور چینی در اندازیوں کے معاملے میں بی جے پی کے رویہ میں 16 مئی کے بعد سے تبدیلی کی شعبدہ بازی کا افسردگی سے مشاہدہ کررہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT