Monday , June 25 2018
Home / شہر کی خبریں / درگاہ حضرات یوسفینؒ کے متولی کے تقرر کا معاملہ سپریم کورٹ پہنچ گیا

درگاہ حضرات یوسفینؒ کے متولی کے تقرر کا معاملہ سپریم کورٹ پہنچ گیا

حیدرآباد ہائی کورٹ کے فیصلہ کے خلاف درخواست ، تلنگانہ وقف بورڈ کا اقدام
حیدرآباد ۔20۔ ڈسمبر (سیاست نیوز) درگاہ حضرات یوسفینؒ کے متولی کے تقرر کا معاملہ سپریم کورٹ تک پہنچ چکا ہے۔ تلنگانہ وقف بورڈ نے حیدرآباد ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں درخواست داخل کی ہے۔ بورڈ نے ایک نامور اور سینئر قانون داں کی خدمات حاصل کرتے ہوئے سپریم کورٹ میں ایس ایل پی داخل کی ہے جس میں حیدرآباد ہائیکورٹ کے احکامات پر حکم التواء کی درخواست کی گئی۔ حیدرآباد ہائی کورٹ نے اپنے حالیہ فیصلے میں ابوالفتح سید حسن شبیر حسینی کو متولی کی حیثیت سے برقرار رکھنے کی ہدایت دی تھی۔ متولی کے سلسلہ میں دو دعویدار ہیں اور یہ معاملہ وقف ٹریبونل میں زیر دوران ہیں۔ اسی دوران صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے بتایا کہ سپریم کورٹ میں مقدمہ کیلئے اعجاز مقبول کی خدمات حاصل کی گئی ہے۔ سپریم کورٹ میں درخواست کو قبول کرلیا گیا ہے اور ہم اس معاملہ کا قریب سے جائزہ لے رہے ہیں۔ محمد سلیم نے کہا کہ درخواست کی سماعت ابھی باقی ہے جس کے بارے میں جلد ہی اطلاع ملے گی۔ متولی اور وقف بورڈ کے درمیان تنازعہ اس وقت شروع ہوا جب نومنتخب بورڈ نے متولی کی میعاد میں توسیع سے متعلق چیف اگزیکیٹیو آفیسر کے احکامات کو کالعدم کردیا۔ شبیر حسینی کو 2015 ء میں اس وقت کے عہدیدار مجاز نے متولی مقرر کیا تھا۔ ڈسمبر 2016 ء میں چیف اگزیکیٹیو آفیسر نے میعاد میں مزید تین سال کی توسیع کردی اور یہ احکامات جاریہ میعاد کی تکمیل سے 6 ماہ قبل جاری کئے گئے۔ وقف بورڈ نے ان احکامات کو کالعدم کردیا لیکن متولی نے اس معاملہ کو ٹریبونل اور پھر ہائی کورٹ سے رجوع کیا۔ ہائیکورٹ کے فیصلہ میں کہا گیا ہے کہ بورڈ نے احکامات کالعدم کرتے ہوئے متولی کو کوئی نوٹس روانہ نہیں کی ہے اور نہ ہی وضاحت کا موقع دیا۔ لہذا ٹریبونل میں مقدمہ کی یکسوئی تک انہیں برقرار رکھا جائے ۔ صدرنشین وقف بورڈ کے مطابق بورڈ میں متفقہ طور پر سپریم کورٹ سے رجوع ہونے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT