Sunday , February 18 2018
Home / Top Stories / درگاہ حضرت جہانگیر پیراں ؒ کو آراستہ کرنے 50 کروڑ روپئے کی منظوری

درگاہ حضرت جہانگیر پیراں ؒ کو آراستہ کرنے 50 کروڑ روپئے کی منظوری

درگاہ شریف پر چندر شیکھر راؤ کی بصد عقیدت و احترام حاضری ۔ منت کی تکمیل پر 51 بکروں کی نیاز کا اہتمام ۔ 100 ایکڑ اراضی پر ترقیاتی کاموں کا اعلان

حیدرآباد 10 نومبر ( سیاست نیوز ) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے اعلان کیا کہ درگاہ حضرت جہانگیر پیراں ؒ کو تمام عصری سہولیات سے آراستہ کرنے حکومت کی جانب سے 50 کروڑ روئے فراہم کئے جائیں گے ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ جہانگیر پیراں ؒدرگاہ کو ترقی دینے 100 ایکڑ اراضی پر تعمیری کاموں کا عنقریب آغاز کیا جائیگا ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ درگاہ کے تحت 27 ایکڑ اراضی موجود ہے اور مزید 70 ایکڑ سرکاری اراضی حاصل کرتے ہوئے 100 ایکڑ کے وسیع و عریض احاطہ میں درگاہ شریف کے عصری پراجیکٹ کے کاموں کا جلد آغاز کیا جائیگا ۔ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے آج اپنی منت کی تکمیل کیلئے درگاہ شریف پر بصد عقیدت و احترام حاضری دی ۔ وہاں چادر اور گلہائے عقیدت پیش کئے اور 51 بکروں کی نیاز کا اہتمام کیا ۔ اس موقع پر ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی ‘ صدر نشین ریاستی وقف بورڈ الحاج محمد سلیم ‘ رکن اسمبلی بودھن محمد عامر شکیل ‘ ایم ایل سی جناب محمد فاروق حسین ‘ رکن پارلیمنٹ محبوبنگر جتیند ریڈی ‘ رکن اسمبلی شادنگر انجیا یادو اور کئی اقلیتی قائدین نے چیف منسٹر کا درگاہ شریف پہونچنے پر استقبال کیا ۔ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ چادر کی کشتی اپنے سر پر اٹھاکر عقیدت و احترام کے ساتھ درگاہ شریف کے احاطہ میں داخل ہوئے ۔ مزار پر چادرگل بھی پیش کی گئی اور فاتحہ خوانی کی گئی ۔ مولانا حافظ محمد سعید الدین خطب مسجد درگاہ نے خصوصی دعا کی ۔ ریاست میں خوشحالی اور ترقی کے علاوہ چیف منسٹرکی صحت و درازی عمر کیلئے بھی دعا کی گئی ۔ بعد ازاں چیف منسٹر نے خصوصی شامیانے میں صحافیوں سے بات چیت کی ۔ انہوں نے کہا کہ درگاہ حضرت جہانگیر پیراںؒ ریاست کی معروف بارگاہو میں سے ایک ہے ۔ یہاں بلا لحاظ مذہب و ملت ہزاروں زائرین زیارت کیلئے آتے ہیں۔ زائرین کو بہتر سہولیات مہیا کرنے کیلئے حکومت نے درگاہ شریف کے اطراف ترقیاتی یکام انجام دینے کا فیصلہ کیا ہے اور اس کیلئے 50 کروڑ روپئے جاری کئے جائیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ علیحدہ ریاست کی جدوجہد کے دوران جب وہ محبوبنگر کے رکن پارلیمنٹ تھے انہوں نے درگاہ شریف پر حاضری دی تھی اور منت مانی تھی کہ علیحدہ ریاست کی تشکیل عمل میں آتی ہے اور ریاست میں ٹی آر ایس کو اقتدار حاصل ہوتا ہے تو وہ یہاں 51 بکروں کی نیاز کرینگے اور آج اسی کی تکمیل کیلئے وہ یہاں پہونچے ہیں۔ چیف منسٹر ‘ ریاستی وزرا ‘ ارکان پارلیمنٹ اور ارکان اسمبلی کے ہمراہ خصوصی بس کے ذریعہ درگاہ شریف دن میں دو بجکر 45 منٹ پر پہونچے ۔ چیف منسٹر نے سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمرجلیل اور حکومت کے مشیر اے کے خان سے درگاہ کے ترقیاتی پراجیکٹ کے تعلق سے تفصیلات معلوم کیں۔ انہوں نے ہدایت دی کہ درگاہ کے احاطہ میں کم از کم 5000 زائرین کو سہولیات فراہم کرنے اور مسجد کو وسیع و عریض کرنے اقدامات کئے جانے چاہئیں۔ چیف منسٹر نے درگاہ کے اندرونی حصے میں 10 منٹ گذارے اور نیاز کیلئے نصب کردہ خصوصی شامیانے میں پہونچے ۔ یہاں انہوں نے ارکان اسمبلی و پارلیمنٹ ‘ ریاستی وزرا اور دوسرے قائدین کے ہمراہ کھانا کھایا ۔ چیف منسٹر نے کہاکہ حکومت پالمور آبپاشی پراجکٹ کے متعلق سنجیدہ ہے۔ پورے علاقے کو سیراب کرنے کام کیاجارہا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ شادنگر کے تمام گرام پنچایتوں کو دس لاکھ روپئے اور تانڈوں کی ترقی کیلئے پانچ لاکھ روپئے رقم جاری کی جائیگی ۔ انہوں نے پالمور آبپاشی پراجکٹ کے تحت ایک لاکھ ایکڑ اراضی کو سیراب کرنے اور ضلع کتور کو صنعتی ہب بنانے کا اعلان کیا اور کہاکہ مجوزہ صنعتی منصوبے کے تحت علاقائی سطح پر بے شمار صنعتیں قائم کی جائیں گی ۔ کے سی آر نے شاد نگر کو حیدرآباد کے طرز پر ترقی دینے کا بھی اعلان کیا۔ ریاستی وزرا این نرسمہا ریڈی‘ لکشما ریڈی‘ سرینواس یادو ‘جوپلی کرشنا رائو‘ پی مہیندر ریڈی‘ چیرمن وقف بورڈ الحاج محمد سلیم‘ ارکان اسمبلی عامر شکیل ‘ سرینواس گوڑ ‘ چیرمن میناریٹی فینانس کارپوریشن اکبر حسین‘ڈپٹی میئر بابا فصیح الدین‘ ایم ایل سی محمد فاروق حسین‘ چیرمن نیٹ کو جناب علیم الدین‘ صدر ٹی آر ایس اقلیتی سل محمد مجیب‘ چیرمن حیدرآباد زراعی مارکٹ کمیٹی شاہین افروز‘ ایم پی بھونگیر بھورا نرسیا گوڑ‘ رکن اسمبلی انجیا گوڑ‘ ایم ایل سی رامو نائیک درگاہ جہانگیر پیراں ؒ پر حاضری دینے والوں میںشامل تھے۔

TOPPOPULARRECENT