Thursday , December 13 2018

دریائے کرشنا سے روزانہ 45 ملین گیالن پانی کی سربراہی

موسم گرما میں تیسرے مرحلہ کی تکمیل سے شہریوں کو بڑی راحت ملے گی

موسم گرما میں تیسرے مرحلہ کی تکمیل سے شہریوں کو بڑی راحت ملے گی
حیدرآباد ۔ 7 ۔ مارچ : ( رتنا چوٹرانی ) : دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد کے عوام کو آنے والے موسم گرما کے دوران پینے کے پانی کے سلسلہ میں کچھ راحت ملنے والی ہے ۔ دریائے کرشنا کے تیسرے مرحلہ کے پراجکٹ کی تکمیل کے ساتھ ہی روزانہ 45 ملین گیالن پانی سربراہ کیا جائے گا ۔ اگرچیکہ دریائے کرشنا کے تیسرے مرحلہ کے پراجکٹ کے تحت روزانہ 90 ملین گیالن پانی سربراہ کرنے کا نشانہ مقرر کیا گیا تھا لیکن کاموں کی عدم تکمیل کی وجہ سے 31 مارچ 2015 تک صرف 45 ملین گیالن پانی سربراہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اس پانی کی سربراہی کا تجربہ کیا گیا ہے ۔ یہ پانی ناگرجنا ساگر کے قریب کونڈا پور سے گوڈا کونڈلان گنگول سربراہ کیا جائے گا ۔ صاحب نگر کے کیرٹیکر آفیسر سنیک پوری اور اطراف و اکناف کے علاقوں کو سربراہی آب کی نگرانی کریں گے ۔ گنگول اور صاحب نگر کے درمیان پائپ لائن کا کام جاری ہے ۔ محکمہ کے سربراہان نے حکومت تلنگانہ کے وعدوں کو پورا کرنے کے عہد کا اعادہ کیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT