Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / دستور کے قتل کے لیے وزیراعظم نریندر مودی ذمہ دار

دستور کے قتل کے لیے وزیراعظم نریندر مودی ذمہ دار

بی جے پی پر ارکان اسمبلی کی خرید و فروخت کا الزام ، گورنر کا غلط استعمال ، محمد علی شبیر
حیدرآباد ۔ 16 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر نے دستور کے قتل کے لیے وزیراعظم نریندر مودی کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے دستوری عہدے گورنر کا بیجا استعمال کرتے ہوئے ارکان اسمبلی کی خرید و فروخت کی حوصلہ افزائی کرنے کا بی جے پی پر الزام عائد کیا ۔ کرناٹک کے 9 اسمبلی حلقوں میں محمد علی شبیر نے انتخابی مہم چلائی جس میں 8 اسمبلی حلقوں پر کانگریس کے امیدواروں نے کامیابی حاصل کی ۔ گلبرگہ اور بیدر کے کانگریس قائدین نے حیدرآباد پہنچ کر محمد علی شبیر سے اظہار تشکر کیا ۔ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل نے اکثریت کے بغیر کرناٹک میں بی جے پی کو حکومت تشکیل دینے کی سرگرمیاں شروع ہوجانے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دستور کے قتل کے وزیراعظم نریندر مودی ذمہ دار ہیں ۔ گورنر جیسے دستوری عہدے کا بیجا استعمال کرتے ہوئے ایک طرف کانگریس اور جے ڈی ایس میں پھوٹ ڈالنے اور دوسری طرف ارکان اسمبلی کی خرید و فروخت کی حوصلہ افزائی کی جارہی ہے ۔ جس کی کانگریس پارٹی سخت مذمت کی ہے ۔ محمد علی شبیر نے گورنر ویجوبھائی والا پر بی جے پی کے قائد یڈروپا کے دعویٰ کو قبول کرتے ہوئے اکثریت نہ ہونے کے باوجود انہیں تشکیل حکومت کی تیاری کرنے ہدایت دینے کی سخت مذمت کی اور کہا کہ کانگریس اور جے ڈی ایس کے پاس تشکیل حکومت کے لیے مکمل اکثریت ہے ۔ دونوں جماعتوں کے ارکان کی تعداد 116 ہے جب کہ تشکیل حکومت کے لیے 112 ارکان اسمبلی کی اکثریت کافی ہے ۔ بی جے پی کی یہ کوشش ملک کے دستور کے لیے خطرے کی گھنٹی ہے ۔ قائد اپوزیشن کونسل نے گورنر کرناٹک کو بہار ، میگھالیہ ، منی پور اور گوا کی مثال کو سامنے رکھنے کے بعد تشکیل حکومت کی دعوت دینے کا مشورہ دیا ۔ گوا ، منی پور اور میگھالیہ میں کانگریس واحد بڑی جماعت تھی جب کہ بہار میں آر جے ڈی اور کانگریس کا اتحاد واحد بڑی جماعت تھی تاہم گورنرس نے بی جے پی اور ان کے حلیفوں کو تشکیل حکومت کے لیے مدعو کیا ۔ اسی فارمولے پر کرناٹک میں بھی عمل ہونا چاہئے ۔ لیکن اس کے برخلاف کارروائی کی جارہی ہے ۔ واضح رہے کہ محمد علی شبیر نے کرناٹک کے 9 اسمبلی حلقوں میں انتخابی مہم چلائی جن میں گلبرگہ سٹی سے کنیز فاطمہ بیدر سٹی سے رحیم خاں بسواکلیان سے بی نارائن راؤ ہنماآباد سے راج شیکھر بسواراج پاٹل اور بنگلور سے روشن بیگ و ضمیر خاں نے کامیابی حاصل کی ۔ گلبرگہ اور بیدر کے کانگریس قائدین آج حیدرآباد پہونچکر محمد علی شبیر سے ملاقات کی اور تہنیت پیش کرتے ہوئے اظہار تشکر کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT