Saturday , November 25 2017
Home / دنیا / دفاعی شعبہ میں ہند ۔ امریکہ تعلقات مزید مستحکم ہوں گے : پنٹگان

دفاعی شعبہ میں ہند ۔ امریکہ تعلقات مزید مستحکم ہوں گے : پنٹگان

وزیراعظم نریندرمودی کے دورۂ امریکہ کے منتظر، ہندوپاک سے امریکہ کے تعلقات انفرادی : پیٹرکوک

واشنگٹن ۔ 17 مئی (سیاست ڈاٹ کام) پنٹگان نے آج کچھ ایسے اہم بیانات جاری کئے ہیں جو یقینا قابل غور ہیں۔ ان بیانات کے مطابق امریکہ ہندوستان اور پاکستان کے ساتھ اپنے روابط کو انفرادی طور پر دیکھنا پسند کرتا ہے۔ پنٹگان پریس سکریٹری پیٹرکوک نے ایک نیوز کانفرنس میں اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ پاکستان کے ساتھ اپنے رشتے کو ہندوستان کے مقابلے صفر نہیں سمجھتا بلکہ دونوں ممالک کی اپنی اپنی اہمیت ہے۔ مسٹر کوک نے کہا کہ اس نکتہ کو دراصل امریکی وزیردفاع ایشٹن کارٹر نے گذشتہ ماہ اپنے دورۂ ہند کے موقع پر واضح کردیا تھا۔ پاکستان میں دہشت گردی کے قلع قمع کیلئے پاک ۔ امریکہ ایک دوسرے سے کئے گئے اپنے وعدے کے پابند ہیں۔ ہم نے دہشت گردی کے موضوع پر متعدد بار تفصیلی بات چیت کی ہے۔ لہٰذا نہ ہندوستان کو اس بارے میں منفی طور پر سوچنا چاہئے اور نہ پاکستان کو۔ اپنا موضوع بدلتے ہوئے پیٹرکوک نے عراق اور شام کا تذکرہ چھیڑ دیا اور کہا کہ دونوں ہی ممالک میں دولت اسلامیہ کا موقف کمزور ہوتا جارہا ہے۔ عراق میں دولت اسلامیہ نے جن مقامات پر کنٹرول حاصل کیا تھا، ان میں بہت سے علاقے اب اس کے ہاتھ سے نکل چکے ہیں۔ اپنی بات کی مزید وضاحت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عراق میں تقریباً 45 فیصد علاقوں کو دولت اسلامیہ کے قبضہ سے حاصل کرلیا گیا ہے جبکہ شام میں یہی تناسب 16 تا 20 فیصد ہے۔

بہرحال امریکہ دولت اسلامیہ کی سرگرمیوں پر کڑی نظر رکھے ہوئے ہے اور اس بات پر زائد توجہ دی جارہی ہیکہ اس وقت وہ کس جانب پیشرفت کررہا ہے۔ اپنی بات جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ موجودہ صورتحال اس بات کی متقاضی نہیں امریکہ کو لیبیا کے باغیوں یا لیبیائی حکومت کے فوجیوں کو مسلح کرنے یا انہیں تربیت فراہم کرنے کی ضرورت ہو تاہم دولت اسلامیہ سے نمٹنے کیلئے جو کچھ کارروائی کی جارہی ہے، اس میں امریکہ کا تعاون برابر شامل رہے گا۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بھی ضروری ہیکہ وزیراعظم نریندر مودی عنقریب امریکہ کا دورہ کرنے والے ہیں لہٰذا ایشٹن کارٹر نے اس نکتہ پر بھی روشنی ڈالی جہاں دونوں ممالک کے درمیان دفاعی تعلقات کو مزید مستحکم کیا جاسکے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہند ۔ امریکہ دونوں کے پاس اپنے دفاعی تعلقات کو مزید وسعت دینے کے مواقع موجود ہیں۔ اس وقت ہم نریندر مودی کے دورہ کے بے چینی سے منتظر ہیں۔ ایشٹن کارٹر نے گذشتہ ماہ ہندوستان کا دورہ کیا تھا جہاں انہوں نے اپنے ہندوستانی ہم منصب منوہر پاریکر سے بات چیت کی تھی اور وزیراعظم نریندرمودی سے ملاقات بھی کی تھی۔ انہوں نے اپنے دورہ کو انتہائی کامیاب قرار دیا تھا اور کہا تھا کہ دونوں ممالک کے درمیان (اصول پسندی کی بنیاد پر) فوج سے فوج کے تعلقات پر کچھ معاہدے بھی ہوئے تھے۔ ایشٹن کارٹر امریکہ کے ایسے پہلے وزیردفاع تھے جنہوں نے ہندوستان کے طیارہ برادر جہاز کا معائنہ بھی کیا تھا۔ انہوں نے چین کے بارے میں کہتے ہوئے بتایا کہ ساؤتھ چائناسی میں چین کی کوئی بھی سرگرمی ہندوستان اور امریکہ کیلئے باعث تشویش ہے۔

TOPPOPULARRECENT