Thursday , January 18 2018
Home / سیاسیات / دفتر شاہی میں سیاسی مداخلت ضروری : وزیراعظم

دفتر شاہی میں سیاسی مداخلت ضروری : وزیراعظم

نئی دہلی ۔ 21 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) جمہوریت میں سیاسی مداخلت کو ضروری قرار دیتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی نے آج واضح کردیا کہ دفتر شاہوں کو اسے اچھی حکمرانی میں دخل اندازی نہیں سمجھنا چاہئے۔ سیاسی مداخلت اور دیگر مداخلت میں فرق کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ جب کاشتکار نظام کو تباہ کریں گے تو سیاسی مداخلت ضروری اور ناگزی

نئی دہلی ۔ 21 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) جمہوریت میں سیاسی مداخلت کو ضروری قرار دیتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی نے آج واضح کردیا کہ دفتر شاہوں کو اسے اچھی حکمرانی میں دخل اندازی نہیں سمجھنا چاہئے۔ سیاسی مداخلت اور دیگر مداخلت میں فرق کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ جب کاشتکار نظام کو تباہ کریں گے تو سیاسی مداخلت ضروری اور ناگزیر ہوجائے گی۔ سیول سرونٹ سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ دفتر شاہی کا مزاج اور سیاسی مداخلت کے بارے میں اکثر بات چیت کی جاتی ہے اور کہا جاتا ہیکہ اس سے جمہوری طریقہ کار کی پیشرفت میں رکاوٹ پیدا ہوتی ہے۔ مودی نے کہاکہ جمہوریت، دفتر شاہی اور سیاسی مداخلت ساتھ ساتھ چلتی ہے۔ یہ جمہوریت کی خصوصیت ہے۔ اگر ہمیں اس ملک کو چلانا ہے تو ہمیں سیاسی مداخلت کو بھی برداشت کرنا ہوگا کیونکہ ایسی مداخلت ضروری اور ناگزیر ہوتی ہے ورنہ جمہوریت کارکرد نہیں ہوتی۔ نریندر مودی نے کہا کہ جمہوریت کیلئے سیاسی مداخلت ضروری ہے کیونکہ ارکان مقننہ عوام کے منتخبہ ہوتے ہیں۔ سیاسی مداخلت اس نظام کو تباہ کردیتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ رکاوٹ اور مشکل جیسے الفاظ کو دفترشاہی نظام سے ہذف کردینے چاہئے۔ احتساب جوابدہی، ذمہ داری اور شفافیت اچھی حکمرانی کے لوازمات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کا محکمہ کام کررہا ہے لیکن کہیں نہ کہیں رک جائے گا۔ آپ سوال کریں گے کہ کیا ہوا اس لئے دفتر شاہی کو کارکردگی کا طریقہ کار عوام کے سامنے پیش کرنا چاہئے جیسے کہ وہ اپنے خانگی کام کے بارے میں جوابدہ ہوتے ہیں۔ عوام کے سوالات کو کارکردگی میں مداخلت نہیں سمجھنا چاہئے بلکہ یہ جوابدہی اور ذمہ داری کی اہمیت ہے۔

TOPPOPULARRECENT