Wednesday , September 19 2018
Home / شہر کی خبریں / دفتر وقف بورڈ کے ریکارڈز کی مہر بندی : وزیر اعلی کا مستحسن اقدام

دفتر وقف بورڈ کے ریکارڈز کی مہر بندی : وزیر اعلی کا مستحسن اقدام

چیف ایکزیکٹیو آفیسر اور نا اہل عملے کو برخاست کرنے اور وقف کمشنریٹ قائم کرنے مسلم ریزرویشن فرنٹ کا مطالبہ
حیدرآباد ۔ 8 ۔ نومبر : ( پریس نوٹ ) : وزیر اعلی تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی جانب سے ریاستی وقف بورڈ کے ریکارڈس کی مہر بندی کرنے پر محمد افتخار الدین احمد ایڈوکیٹ ہائی کورٹ و ریاستی صدر مسلم ریزرویشن فرنٹ نے خیر مقدم کرتے ہوئے اس جرات مندانہ کی ستائش کی اور کہا کہ چیف ایکزیکٹیو آفیسر اور چند نا اہل اور ضمیر فروش ، خود غرص عملے کی لاپرواہی اور ناقص کارکردگی کی وجہ سے کروڑوں روپیوں کی قیمتی اوقافی املاک کو شدید نقصان پہنچ رہا ہے ۔ وقف بورڈ کے عملے پر چیف ایکزیکٹیو آفیسر کی کوئی گرفت نہ ہونے کی وجہ سے سینکڑوں فائیلیں مہینوں سے عدم یکسوئی کا شکار ہے ۔ اضلاع سے اوقافی املاک کی ناجائز قبضوں اور عدالتوں میں برسوں سے عدم تصفیہ مقدمات کے سلسلہ میں کئی بار نمائندگی کئے جانے کے باوجود چیف ایکزیکٹیو آفیسر لاپرواہی کا مظاہرہ کرتے ہوئے نظر آتے ہیں ۔ مسلم وقف کی املاک کے تحفظ کے لیے کام کرنے والے سماجی کارکنوں و قائدین کے ساتھ بھی ان کا رویہ نازیبا رہا ہے ۔ چیف ایکزیکٹیو آفیسر کے عہدہ کے لیے کم از کم ڈپٹی کلکٹر کے رینک کے عہدہ دار کا تقرر ہونا چاہئے ۔ ایک طرف وقف بورڈ چیرمین محمد سلیم نے کئی ایک اوقافی جائیدادوں پر ناجائز قبضوں کو برخاست کرنے اور کئی برسوں سے بند پڑی ہوئی مساجد کو آباد کرنے کے لیے مخلصانہ جدوجہد کررہے ہیں تو دوسری طرف وہیں وقف بورڈ کا ایک مخصوص گروہ لینڈ گرابرس کے ساتھ سازباز کرتے ہوئے وقف املاک کی تباہی میں اپنا کردار ادا کررہا ہے ۔ یہاں تک کہ چیرمین وقف بورڈ کے احکامات کو بھی وقف عملے کی جانب سے نظر انداز کیا جارہا ہے ۔ دفتر وقف بورڈ میں گروہ واری سیاست اور عہدیداروں کے درمیان آپسی رنجش کی وجہ سے کام کاج ٹھپ ہو کر رہ گیا ہے ۔ حکومت ریاست کے تمام اوقافی املاک کو ڈیجیٹلائزیشن کے ذریعہ ایک جامع ریکارڈ بنائے اور اسے منظر عام پر لائے تاکہ عوام کو بھی اوقاف کی املاک کے تحفظ میں آسانی ہو ۔ مسلم ریزرویشن فرنٹ نے کے چندر شیکھر راؤ ، محمد محمود علی کے اوقافی املاک کے تحفظ اور ریونیو ریکارڈز میں اندراج کے سلسلہ میں کئے جارہے کوششوں کو سراہتے ہوئے مطالبہ کیا کہ حکومت تلنگانہ محکمہ وقف کمشنریٹ کا فی الفور قیام عمل میں لاتے ہوئے قابل و دیانتدار آئی اے ایس آفیسر کا بحیثیت وقف کمشنر تقرر کرے تاکہ اوقافی املاک کا بہتر تحفظ اور منشائے وقف کے تحت استعمال ہوسکے ۔ وقف بورڈ میں فائیلوں کی یکسوئی کا وقت مقرر کرتے ہوئے سیٹیزن چارٹر بنایا جائے تاکہ اوقافی مسائل کی متعینہ مدت میں یکسوئی ہوسکے ۔ فائیلوں کی متعینہ مدت میں عدم یکسوئی پر متعلقہ عہدیدار کے خلاف تادیبی کارروائی کی جائے ۔۔

TOPPOPULARRECENT