Thursday , May 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / دفعہ 371جے کی منظوری اور نفاذ سے علاقہ حیدرآباد کرناٹک کی ترقی میں اضافہ

دفعہ 371جے کی منظوری اور نفاذ سے علاقہ حیدرآباد کرناٹک کی ترقی میں اضافہ

پی ڈی اے انجنیئرنگ کالج گلبرگہ میں منعقدہ تقریب سے چیف منسٹر سدرامیا کا خطاب

گلبرگہ 19 دسمبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) چیف منسٹر کرناٹک سدرامیا نے کہا ہے کہ علاقہ حیدر آباد کرناٹک آئیندہ برسوں میں بہت زیادہ ترقی کرے گا۔ انھوں نے کہا ہے کہ مرکز میں کانگریس کی حکومت کے دوران دستور ہند کی دفعہ 371Jکی ترمیم کے ذریعہ علاقہ حیدر آباد کرناٹک کی پسماندگی کے خاتمہ اور یہاںکے عوام کو سرکاری ملازمتوں اور اعلیٰ تعلیمی نصابوںمیں داخلوں کے لئے تحفظات فراہم کئے گئے ۔ دستور ہندؤ کی اس ترمیمی دفعہ کی منظوری کے سبب اس علاقہ کی روز افزوںترقی کے مکانات کافی روشن ہوگئے ہیں ۔ چیف منسٹر سدرامیا پی ڈی اے انجنئیرنگ کالج گلبرگہ میں جی این ناگراجوا انڈسٹرئیل ٹریننگ سنٹر کی افتتاحی تقریب سے خطاب کررہے تھے ۔چیف منسٹر نے کہا کہ کرناٹک کی کانگریس حکومت نے اپنے دور اقتدار میں حیدر آباد کرناٹک علاقائی ترقیاتی بورڈ پر خصوصی توجہ دیتے ہوئے اسے کروڑوں روپیوں کے فنڈس جاری کئے ۔ انھوں نے کہا کہ گزشتہ پانچ سال کے دوران دفعہ 317J کے تحت علاقہ حیدر آباد کرناٹک کے ہزاروں امیدواروں کو سرکاری ملازمتوںمیں تحفظات فراہم کئے گئے ۔ ان کے تقررات عمل میں لائے گئے ۔ اسی طرح اعلی ٰ تعلیمی نصابوںمیں اس علاقہ کے طلبا و طالبات کو دفعہ 371J کے تحت تحفظات فراہم کرتے ہوئے داخلے دئے جارہے ہیں ۔انھوں نے بتایا کہ مستقبل میں اس دستوری ترمیم میںمزید تبدیلیاں ہوسکتی ہیں ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ریاست میں کانگریس کے اقتدار پر آنے کے بعدحیدر آباد کرناٹک علاقائی ترقیاتی بورڈ نے اس علاقہ کی ترقی پر بھر پور توجہ دی۔ حکومت نے اس بورڈ کو سالانہ 1000کروڑ روپئے جاری کئے ۔ اس کے علاوہ اس سال حیدر آباد کرناٹک علاقائی ترقیاتی بورڈ کو اس کے ترقیاتی کاموںکی تکمیل کے لئے 1500کروڑ روپئے جاری کئے گئے ہیں ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ یہ علاقہ عرصہ دراز سے پسماندہ تھا ۔ 60سال قبل یہاںمہا دیو اپا رام پورے نے ہائی ٹیک تعلیمی ادارے قائم کرکے تعلیمی انقلاب برپا کرنے کے اقدامات کئے ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ہر ایک کو بہتر سے بہتر تعلیم حاصل کرنے کا حق حاصل ہے۔ ریاستی حکومت ہر فرد کے لئے بہتر سے بہتر تعلیمی سہولیات مہیا کررہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ اگر خانگی تعلیمی ادارے قائم نہ کئے جاتے تو اس صورت میں تعلیمی معیار کی سطح بالکل نیچے ہوتی۔ عوام کو تعلیم یافتہ بنانے اور شرح تعلیم میں اضافہ کرنے کے معاملہ میں خانگی تعلیمی اداروں کا کردار بڑی اہمیت رکھتا ہے۔ چیف منسٹر نے اس موقع پر کہا کہ ہمارے بچوںکو ایسی تعلیم دی جانی چاہئے کہ وہ عالمی سطح پر بھی مقابلوں میں حصہ لے سکیں ۔ اس موقع پر ایچ کے ای سوسائیٹی کے ارکان اور بورڈآف گورنرس کی جانب سے چیف منسٹر کے ریلیف فنڈ میں 20لاکھ رروپیوں کا چیک پیش کیا گیا ۔ وزیر میڈیکل ایجوکیشن کرناٹک و ضلع انچارج وزیر گلبرگہ ڈاکٹر شرن پرکاش پاٹل، وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی و سیاحت پریانک کھرگے ، رکن اسمبلی جیورگی ڈاکٹر اجئے سنگھ، الحاج اقبال احمد سرڈگی رکنقانون ساز کونسل کرناٹک ، مئیر گلبرگہ شرنکمار مودی ، و دیگر اس تقریب میںشریک تھے ۔ صدر حیدر آباد کرناٹک ایجوکیشن سوسائیٹی مسٹر بسوراج بھیملی نے جلسہ کی صدارت کی ۔

TOPPOPULARRECENT