Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / دلتوں پر مظالم کیلئے ذمہ دار پولیس اہلکار معطل کئے جائیں

دلتوں پر مظالم کیلئے ذمہ دار پولیس اہلکار معطل کئے جائیں

نیرلہ واقعہ پر حکومت کے خلاف متحدہ جدوجہد کرنے اپوزیشن کا فیصلہ۔ گول میز کانفرنس کا انعقاد
حیدرآباد۔10 اگست (سیاست نیوز) نیرلہ واقعہ پر تمام اپوزیشن جماعتوں نے حکومت کے خلاف متحدہ جدوجہد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ دلتوں اور قبائیلیوں پر ظلم و ستم کے ساتھ تھرڈ ڈگری استعمال کرنے والے پولیس ملازمین کو فوری معطل کرنے کا مطالبہ کیا۔ 11 اگست کو ڈی جی پی اس کے بعد، گورنر، صدرجمہوریہ، قومی انسانی حقوق کمیشن، ایس سی۔ایس ٹی کمیشن سے بھی شکایت کرنے سے اتفاق کیا گیا۔ تلنگانہ پردیش کانگریس ایس سی سیل کی جانب سے آج پریس کلب، سوماجی گوڑہ میں راؤنڈ ٹیبل کانفرنس کا اہتمام کیا گیا جس میں صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی، ورکنگ پریسیڈنٹ ملوبٹی وکرامارک، تلنگانہ تلگو دیشم پارٹی کے ورکنگ پریسیڈنٹ ریونت ریڈی، صدر تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی پروفیسر کودنڈا رام، چنتا سامبا مورتی (بی جے پی)، بی ملیش (سی پی ایم)، پروفیسر ویشوریا (عام آدمی پارٹی) کے علاوہ کانگریس کے دوسرے قائدین نے شرکت کی۔ اتم کمار ریڈی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چیف منسٹر کے سی آر اور ان کا خاندان غریب عوام، دلتوں کی زندگیوں سے کھلواڑ کرتے ہوئے ریت مافیا کی حوصلہ افزائی کررہا ہے۔ نیرلہ واقعہ کے متاثرین نے ڈی ایس پی سرسلہ سے ملاقات کرکے انکے خلاف تھرڈ ڈگری استعمال کرنے والے پولیس ملازمین کے خلاف ایس سی ۔ ایس ٹی ایکٹ کے تحت مقدمات درج کرنے شکایت کی ہے، جس کو نظرانداز کردیا گیا ہے۔ جمعہ کو کل جماعتی وفد نے ڈی جی پی انوراگ شرما کو ایک میمورنڈم پیش کرے گا۔ اس کے علاوہ گورنر نرسمہن سے ملاقات کرکے ٹی آر ایس حکومت کی مخالف دلت قبائیلی پالیسی کے خلاف نمائندگی کرے گا۔ مجسمہ ڈاکٹر امبیڈکر پر احتجاجی دھرنا منظم کیا جائے گا۔ 21 تا 22 اگست کو کل جماعتی وفد دہلی پہنچ کر صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند سے شکایت کرے گا۔ قومی انسانی حقوق کمیشن کے بشمول ایس سی۔ ایس ٹی کمیشن سے بھی نمائندگی کی جائے گی۔ ساتھ ہی اپوزیشن کی تمام جماعتوں کی جانب سے پدیاترا کرتے ہوئے جلسہ عام بھی منعقد کیا جائے گا۔ متاثرین کو انصاف ملنے تک متحدہ طور پر جدوجہد کو جاری رکھا جایء گا۔ ریونت ریڈی نے ریاستی وزیر کے ٹی آر کو ریت مافیا ڈان کی طرح کام کرنے کا الزام عائد کیا۔ دلتوں اور قبائیلیوں کے خلاف حملہ کرنے والوں کے خلاف ابھی تک کارروائی نہ کرنے پر تشویش کا اظہار کیا۔ پروفیسر کودنڈا رام نے ریت مافیا کی جانب سے دہشت پھیلاتے ہوئے کاروبار کرنے کا الزام عائد کیا۔

TOPPOPULARRECENT