دلت مسائل کی یکسوئی کیلئے عنقریب نئے سیاسی محاذ کی تشکیل

12 جماعتوں اور تنظیموں سے ٹی پی پی کی بات چیت جاری : چندرا کمار
حیدرآباد۔/19 ستمبر، ( سیاست نیوز) نو تشکیل شدہ تلنگانہ پرجالا پارٹی ( ٹی پی پی ) ’’طاقت اور خاندان پر مبنی سیاست ‘‘ کے خلاف مقابلہ کرنے کیلئے دلتوں پر مشتمل سیاسی محاذ قائم کررہی ہے۔ چنانچہ تلنگانہ میں مختلف سیاسی جماعتوں پر مشتمل ایک منفرد سیاسی محاذ منظر عام پر آئے گا جو دلتوں کے لئے کام کرے گا۔ اس کے علاوہ ریاست میں دولت، طاقت اور خاندان کی سیاست کے خلاف مشترکہ لڑائی شروع کی جائے گی۔ تلنگانہ پراجالا پارٹی ( ٹی پی پی ) کے صدر بی چندرا کمار نے جو ہائی کورٹ کے ریٹائرڈ جج بھی ہیں ریاست کے عوام اور بالخصوص دلتوں کے مسائل کے لئے جدوجہد کے مقصد سے تلنگانہ پرجا ویدیکا کا آغاز کیا تھاایک نئے محاذ کے قیام کی تیاریوں کی قیادت کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بہوجن سماج پارٹی ( بی ایس پی ) ، ایس پی، لوک ستہ پارٹی، تلنگانہ پراجالا پارٹی، مجلس بچاؤ تحریک ، چند دیگر جماعتیں اور تنظیمیں مجوزہ فرنٹ کا حصہ ہوں گی۔ 12 ہمخیال جماعتوں و تنظیموں کے ساتھ اس ضمن میں بات چیت جاری ہے۔ریٹائرڈ جسٹس چندرا کمار نے اپنی پارٹی کے آفس کا افتتاح کرنے کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اندرون دو ماہ اس محاذ کا قیام عمل میں آئیگا۔ اس کا اصل مقصد ایک متبادل سیاسی نظام تشکیل دینا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی پی پی سیاسی رشوت ستانی کا خاتمہ کرنا چاہتی ہے۔سب کیلئے مفت صحت و تعلیم کو یقینی بنانے کے علاوہ زراعت کو ایک منافع بخش پیشہ بنانے کے لئے کام کیا جائے گا۔ اس نظریہ پر یقین رکھنے والی ہر ایک جماعت اور تنظیم سے ہاتھ ملایا جائے گا۔ ایم کودنڈا رام کی طرف سے قائم کردہ تلنگانہ جنا سمیتی ( ٹی جے ایس ) کے ساتھ کام کرنے کے امکان پرچندرا کمار نے کہا کہ اس تنظیم سے مفاہمت کیلئے تیار ہیں بشرطیکہ وہ کانگریس، بی جے پی اور ایسی ہی کسی دوسری جماعت سے مفاہمت نہ کرے کیونکہ ’’ ہمارے لئے ٹی آر ایس، کانگریس، بی جے پی یا تلگودیشم سب ایک جیسے ہیں اورپالیسیوں کے معاملہ میں ان جماعتوں کے درمیان کوئی خاص فرق نہیں ہے۔ یہ تمام جماعتیں زمیندارانہ ذہنیت پر مبنی پالیسیوں کی حامل ہیں۔‘‘

TOPPOPULARRECENT