Thursday , June 21 2018
Home / جرائم و حادثات / دلخراش و المناک حادثہ ، 6 بچے اور چار خواتین ہلاک

دلخراش و المناک حادثہ ، 6 بچے اور چار خواتین ہلاک

5 افراد زخمی ، نظام آباد کے موضع منڈورا میں تیز رفتار بے قابو آٹو زرعی باؤلی میں گرگیا

نظام آباد ۔ /25 مارچ (سیاست نیوز) ضلع نظام آباد کے موپکال منڈل کے منڈورا کے پاس ایک تیز رفتار آٹو زرعی باؤلی میں گرنے کی وجہ سے بشمول 6 بچے 4 خواتین ہلاک ہوگئے ۔ جبکہ اس حادثہ میں آٹو ڈرائیور اور چار افراد زخمی ہوگئے ۔ تفصیلات کے بموجب ضلع نظام آباد کے موپکال منڈل سے کوڑبچرلہ ، بسوال جانے کیلئے 14 تا 16 افراد آٹو کے ذریعہ جارہے تھے اور آٹو تیز رفتار تھا اور بے قابو ہوگیا ۔ جس کی وجہ سے منڈورا کے قریب واقع ایک زرعی باؤلی میں جاگرا ۔ جس کے نتیجہ میں سائے اوا 50 سال متوطن ویمپلی بالکنڈہ ،ایم کے لکشمی 38 سال متوطن دھرماورا مورتاڑ ۔ کے گنگا وا 45 سال متوطن کیشاپورم ڈچپلی ، پی سمپت 14 سال متوطن موسرا ورنی ، جی گنگامنی 45 سال متوطن کیشاپورم ڈچپلی ، واسوی 6 سال متوطن کوڑ بچرلہ موسرا منڈل ، مانا ساوینی 3 سال متوطن الور آرمور ۔ ٹی چنا 2 سال متوطن چٹاپور منڈل بالکنڈہ ، ٹی راجہ 25 سال متوطن چٹاپور ٹی چکری 5 سال متوطن چٹاپور بالکنڈہ منڈل شامل ہیں جبکہ اس حادثہ میں آٹو ڈرائیور گوپی سرینواس متوطن موپکال کے علاوہ سومالتا ، مالاوا ، چناراجو ، بی وجیا زخمی ہونے پر نظام آباد آرمور سرکاری دواخانہ منتقل کیا گیا ۔ یہ واقعہ 2 بجکر 30 منٹ کے درمیان پیش آیا ۔ آٹو میں تعداد سے زیادہ مسافروں کو سوار کیا گیا اور انتہائی تیز رفتار سے چلانے کی وجہ سے بے قابو ہوگیا تھا جس کے نتیجہ میں زرعی باؤلی میں گرنے کی وجہ سے آٹو سوار افراد باؤلی میں گرگئے ۔ زخمی 4 افراد اور آٹو ڈرائیور زرعی باؤلی میں موجودہ واٹر پائپ کا سہارا لینے کی وجہ سے بچ گیا ۔ اطراف و اکناف علاقے میں کام کرنے والے زرعی پیشہ وار افراد اس منظر کو دیکھ کر فوری یہاں پہنچ گئے اور زخمی افراد کو باہر نکالنے کیلئے امدادی کام کرنا شروع کیا ۔ اطلاع ملتے ہی پولیس موپکال یہاں پہنچکر کمشنر پولیس کارتیکا کو اطلاع دی ۔ اطلاع کے ملتے ہی پولیس فائر بریگیڈ یہاں پہنچکر امدادی کاموں کو شروع اور غوطہ خور کو طلب کرتے ہوئے نعشوں کو باہر نکالنے کا کام شروع کیا ۔ باؤلی میں پانی گہرا ہونے کی وجہ سے نعشوں کو ڈھونڈکر نکالنا پڑا اور آٹو کو بھی باہر نکالنے کے بعد ہی مہلوکین کی مکمل تعداد کا اندازہ لگایا گیا ۔ اطلاع ملتے ہی ضلع کلکٹر مسٹر رام موہن راؤبھی مقام حادثہ کو پہنچ گئے ۔ اس بات کی اطلاع ملتے ہی وزیر زراعت پوچارم سرینواس ریڈی نے ضلع کلکٹر سے مسٹر رام موہن راؤ سے فون پر بات چیت کی اور بہتر سے بہتر علاج فراہم کرنے کی ہدایت دی ۔ رکن اسمبلی بالکنڈہ مسٹر پرشانت ریڈی اطلاع کے ملتے ہی حیدرآباد سے نظام آباد کیلئے روانہ ہوگئے اور مہلوکین کی آخری رسومات کی انجام دہی کیلئے فی کس 10 ہزار روپئے فراہم کرنے کا اعلان کیا ۔ اور ایکس گریشیا کیلئے چیف منسٹر سے نمائندگی بھی کی ۔ چیف منسٹر مسٹر چندر شیکھر راؤ نے منڈورا میں ہوئے حادثہ پر گہرا رنج و غم ظاہر کرتے ہوئے اظہار تعزیت کیا ۔ چیف منسٹر نے تعزیتی پیام روانہ کرتے ہوئے اس حادثہ پر شدید رنج و غم کا اظہار کیا اور متاثرہ افراد خاندان سے اظہار تعزیت بھی کی ۔ آٹو ڈرائیور کی لاپرواہی تیز رفتار ہونے کے باعث 10 افراد ہلاک ہوگئے ہیں ۔ اطلاع کے ملتے ہی اطراف و اکناف میں رہنے والے افراد کے علاوہ مہلوکین کے رشتہ دار بڑے پیمانے پر جمع ہونے کی وجہ سے پولیس کو ہجوم کو قابو کرنے میں مشکلات پیش آرہی تھیں۔ پولیس موپکال اس کیس کو درج کرکے تحقیقات کا آغاز کردیا ۔ رکن پارلیمنٹ کے کویتا نے بھی اس واقعہ پر گہرا رنج و غم کا اظہار کیا اور متاثرہ خاندانوں سے اظہار تعزیت کی ۔

TOPPOPULARRECENT