Saturday , December 15 2018

دنیا و آخرت کی سربلندی اسلام کے ذریعہ ہی ممکن

کریم نگر ۔ 14 ۔ مارچ : ( دکن نیوز ) : جناب عامر علی خاں نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے کہا کہ عصر حاضر میں ایک حقیقی مسلمان کے لیے ہر سطح پر مختلف نوعیت کے چیالنجس درپیش ہیں جن سے نمٹنا اور ان پر قابو پانا بہت بڑا جہاد ہے ۔ انہوں نے کہا کہ زندگی کے معاملات اور شادی بیاہ میں آج بھی مسلمان فرسودہ روایات اور بے جا رسم و رواج کا اسیر بنا ہوا ہے ا

کریم نگر ۔ 14 ۔ مارچ : ( دکن نیوز ) : جناب عامر علی خاں نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے کہا کہ عصر حاضر میں ایک حقیقی مسلمان کے لیے ہر سطح پر مختلف نوعیت کے چیالنجس درپیش ہیں جن سے نمٹنا اور ان پر قابو پانا بہت بڑا جہاد ہے ۔ انہوں نے کہا کہ زندگی کے معاملات اور شادی بیاہ میں آج بھی مسلمان فرسودہ روایات اور بے جا رسم و رواج کا اسیر بنا ہوا ہے اس طرح آج کے دور میں پراکٹیکل اسلام اور کلچرل اسلام میں بہت بڑا تضاد پیدا ہوگیا ہے ۔ شادی کی تقاریب میں دکھاوا ، بناوٹی پن دراصل ہماری ذہنی گراوٹ کا نتیجہ ہے ۔ ہم میں سے اکثر لوگ یہ سوچتے ہیں کہ اُن کے رشتہ دار و پڑوسی کیا کہیں گے ۔ اللہ کی رضا اور اپنے پیارے نبی کریم ﷺ کی خوشنودی کے بجائے ہم زمانے سے خوف کھائے ہوئے ہیں ۔ اس لیے مسلمانوں کے حالات اور مسائل سنگین نوعیت اختیار کرچکے ۔ جناب عامر علی خاں آج مسلم بہبود کمیٹی ضلع کریم نگر کے زیر اہتمام ایس ایف ایس گارڈن ، پدا پلی روڈ کریم نگر میں تیسرے دوبدو ملاقات پروگرام میں شریک والدین و سرپرستوں کے ایک پرہجوم جلسہ کو مخاطب کررہے تھے ۔ ادارہ سیاست اور مینارٹیز ڈیولپمنٹ فورم حیدرآباد کے تعاون سے منعقدہ اس پروگرام کی صدارت جناب سید محی الدین صدر مسلم بہبود کمیٹی کریم نگر نے کی ۔ مولانا مفتی برکت اللہ قاسمی امیر شرعی فیصلہ کمیٹی کریم نگر ، جناب عابد صدیقی صدر مینارٹیز ڈیولپمنٹ فورم نے مہمانان اعزازی کی حیثیت سے شرکت کی ۔ اس موقع پر سیاست اور ایم ڈی ایف کے عہدیدار مسرس اقبال احمد خاں ، ایم اے قدیر ( نائب صدور ) ، احمد صدیقی مکیش ، محمد نصر اللہ خاں پبلسٹی سکریٹری ، عرشیہ عامرہ خاں ، رفیعہ سلطانہ (ثانیہ ) ، نعیم وجاہت ، محمد محی الدین ، مولانا عبدالقادر صدر ملت اسلامیہ سدی پیٹ ، ریاض علی رضوی ، سید امام الدین ، ضیا الدین احمد انجینئر ، عرفان الحق ، سید ضمیر الدین اور دوسرے موجود تھے ۔ جناب عامر علی خاں نے کہا کہ مسلم معاشرہ میں موجودہ بگاڑ کا اصل سبب قرآنی احکامات سے ناواقفیت اور دوری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قرآن صرف پڑھنے والی کتاب نہیں ہے بلکہ اللہ تعالیٰ نے قرآنی آیات پر غور و فکر کرنے کا حکم دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سورۃ النساء میں شادی سے متعلق تمام احکامات اور مسائل کے حل کا احاطہ کیا گیا ۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ مسلمان قرآنی تعلیمات پر عمل کریں اور حضور اکرم ﷺ کی حیات طیبہ کو اسوہ بنائیں ۔ انہوں نے کہا کہ دنیا و آخرت میں سربلندی اسلام کے ذریعہ ہی ممکن ہے ۔ انہوں نے مسلمانوں پر زور دیا کہ سادی زندگی گذاریں تاکہ ان کی زندگیوں میں حقیقی مسرت اور سکون پیدا ہوسکے ۔ انہوں نے اس بات پر افسوس کیا کہ مسلم شادیوں میں حرص و لالچ ، ریاکاری ، جھوٹی شان و شوکت کا رجحان بڑھتا جارہا ہے جس کے باعث مسلم شادیاں ناکام ہورہی ہیں
انہوں نے کہا کہ سیاست نے اسراف اور لین دین کے خلاف جو تحریک چلائی ہے اس کا مقصد مسلمانوں کو معاشی پریشانیوں اور سماجی برائیوں سے بچانا ہے ۔ جناب عابد صدیقی صدر ایم ڈی ایف نے کہا کہ سرکار دوجہاں ﷺ نے نکاح کو آسان بنانے کا حکم دیا ہے لیکن آج مسلمانوں نے جہیز ، لین دین اور فضول خرچی کے ذریعے نکاح کو دشوار بنادیا ہے ۔ اسی طرح حضورﷺ نے فرمایا جس نکاح میں کم سے کم اخراجات ہوں وہ اللہ کی رحمتوں اور برکتوں کا حقدار ہے ۔ لیکن کئی مسلمان اپنے آقاؐ کی اس ہدایت کی خلاف ورزی کرتے ہیں ۔ شادی خانوں سے لے کر تناول طعام ، ملبوسات اور دیگر امور میں بے جا اخراجات کرتے ہیں جس سے نکاح کے بعد نہ صرف ازدواجی زندگی ناخوشگوار ہوتی جارہی ہے بلکہ دونوں خاندانوں میں اختلافات خلع و طلاق تک پہنچ جاتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ سیاست و ایم ڈی ایف نے جناب زاہد علی خاں کے زیر قیادت جو تحریک شروع کی ہے اس کا مقصد مسلم معاشرہ میں پیدا ان برائیوں کا سدباب کرنا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جناب ظہیر الدین علی خاں کی مساعی کے نتیجہ میں سیاست و ایم ڈی ایف نے 40 دوبدو ملاقات پروگرام شہر و اضلاع میں منعقد کئے ۔ ہر مسلمان کا فریضہ ہے کہ وہ اپنے معاشرہ کو برائیوں سے بچائے ۔ مولانا برکت اللہ قاسمی استاد حدیث سبیل السلام حیدرآباد نے کہا کہ نکاح جنت کے حصول کا ذریعہ ہے ۔ یہ ایک ایسی عبادت ہے جس کی جزا جنت ہے ۔ انہوں نے نکاح کے اسلامی تصور کو واضح کرتے ہوئے کہا کہ حضورؐ نے فرمایا کہ ’ نکاح میری سنت ہے اور جو میری اس سنت سے احتراز کرے گا وہ ہم میں سے نہیں ‘ ۔ انہوں نے کہا کہ اسلام نے نکاح کے معاملہ میں مرد پر زیادہ ذمہ داریاں عائد کی ۔ شوہر کے لیے لازم ہے کہ وہ مہر ادا کرے اور اپنی حیثیت کے مطابق دعوت ولیمہ کا اہتمام کریں اور اپنی بیوی کی تمام ضرورتوں کی تکمیل کرے ۔ اسلام نے لڑکی کے والدین کی طرف سے دعوت کا اہتمام کرنے مطالبات وجہیز لینے اور لڑکے والوں کی پسند کے شادی خانہ میں شادی کرنے کا کہیں ذکر نہیں کیا اور نہ ہی علماء نے اس کی ہدایت کی ہے ۔ افسوس کی بات ہے کہ مسلمان ان اصولوں کو بالائے طاق رکھے ہوئے ہیں ۔ ابتداء میں جناب سید محی الدین صدر مسلم بہبود کمیٹی کریم نگر نے خیر مقدمی تقریر میں کہا کہ ریاست تلنگانہ میں کریم نگر واحد ضلع ہے جہاں اب تک تین دوبدو ملاقات پروگرام ہوچکے ہیں ۔ اس مختصر سے عرصہ میں دوبدو پروگرام کے ذریعہ لڑکوں و لڑکیوں کے 150 رشتے طئے پاچکے ، انہوں نے کہا کہ ادارہ سیاست و ایم ڈی ایف نے ہمیشہ فلاحی سرگرمیوں اور ملی خدمات کی نہ صرف سرپرستی کی بلکہ مکمل تعاون بھی دراز کیا ہے ۔ حافظ و قاری سید شاہ محمد قادری خطیب امام مسجد کورٹلہ کی قرات کلام پاک سے جلسہ کا آغاز ہوا ۔ محمد نعیم نے بارگاہ الہی میں حمد اور احمد صدیقی مکیش ، عبدالنعیم نے بارگاہ رسالت ؐ میں نعت پیش کی ۔ ریاض علی رضوی جوائنٹ سکریٹری مسلم بہبود کمیٹی نے نہایت عمدگی کے ساتھ جلسہ کی کارروائی چلائی اور شکریہ ادا کیا ۔ جلسہ کے بعد کونسلنگ کا آغاز ہوا ۔ محترمہ عرشیہ عامرہ ، ثانیہ ، ایم اے قدیر ، اقبال احمد خاں اور عابد صدیقی اور مسلم بہبود کمیٹی کے عہدیدار سید ضمیر الدین ، سعادت صدیقی ، ضیا الدین احمد سپرنٹنڈنٹ انجینئر و جنرل سکریٹری ، سید امام الدین ، محمد عبداللہ اسد ، سید شاہ منصور علی توکلی ، مخدوم علی ، محمد مجاہد عادل ، سلیم فاروقی و دیگر نے کونسلنگ میں حصہ لیا ۔ اس موقع پر مسلم بہبود کمیٹی کی جانب سے رجسٹریشن کاونٹر کے علاوہ لڑکوں و لڑکیوں کی تعلیمی قابلیت کے اعتبار سے 6 کاونٹرس قائم کئے گئے تھے ۔ دوبدو پروگرام میں تقریبا 1000 مسلم والدین و سرپرستوں نے شرکت کی ۔ جن میں خواتین کی تعداد زیادہ دیکھی گئی ۔ کریم نگر ، جگتیال ، جمی کنٹہ ، کورٹلہ ، سدی پیٹ کے علاوہ اطراف و اکناف کے اضلاع کے مسلم والدین نے رشتوں کے انتخاب کے اس دوبدو پروگرام میں شرکت کی ۔ عابد صدیقی صدر ایم ڈی ایف ، سید محی الدین صدر مسلم بہبود کمیٹی نے تیسرے دوبدو ملاقات پروگرام کی کامیابی پر برادران اسلام ، صحافت ، نیوز چینلس ، محکمہ پولیس اور دیگر سے اظہار تشکر کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT