Saturday , February 24 2018
Home / Top Stories / دن بھر لاپتہ توگاڑیہ سڑک پر بیہوش دستیاب

دن بھر لاپتہ توگاڑیہ سڑک پر بیہوش دستیاب

وی ایچ پی لیڈر کی گرفتاری کیلئے پہونچی راجستھان پولیس کی ٹیم وارنٹ پر تعمیل کے بغیر واپس

احمدآباد ۔ 15 جنوری ۔(سیاست ڈاٹ کام)احمدآباد سے دن بھر لاپتہ رہنے کے بعد وشواہندو پریشد ( وی ایچ پی ) کے کارگذار صدر پروین توگاڑیہ احمدآباد کے شاہی باغ علاقہ کی سڑک پر آج رات بیہوش دستیاب ہوئے ۔ اُنھیں فوری دواخانہ منتقل کیا گیا ۔ اُنھیں زیڈ پلس زمرہ کی سکیورٹی حاصل ہے ۔ وی ایچ پی کے بموجب وہ لو بلڈ پریشر کے مریض ہیں۔ قبل ازیں وی ایچ پی نے آج دعویٰ کیا کہ اُس کے بین الاقوامی کارگذار صدر پروین توگاڑیہ صبح سے لاپتہ ہیں اور احتجاجی دھرنا دیتے ہوئے وی ایچ پی کارکنوں نے اُن کا پتہ چلانے کا مطالبہ کیا ۔ وی ایچ پی نے دعویٰ کیا کہ 62 سالہ توگاڑیہ کو راجستھان پولیس نے ایک مقدمہ کے ضمن میں حراست میں لیا تھا ، لیکن مواخرالذکر نے اس دعویٰ کی تردید کی ہے ۔ مقامی 16پولیس اسٹیشن کے عہدیداروں نے کہا کہ ہندوتوا لیڈر کے خلاف ہندوستانی تعزیری ضابطہ کی دفعہ 188 (سرکاری ملازم کے احکام پر تعمیل سے نافرمانی ) کے ایک قدیم مقدمہ میں راجستھان پولیس کی ایک ٹیم گرفتاری کے احکام پر تعمیل کیلئے پہونچی تھی ۔ لیکن وہ اپنی رہائش گاہ پر نہیں پائے گئے ۔ وی ایچ پی گجرات یونٹ کے جنرل سکریٹری رنچوڑ بھروات نے اخباری نمائندوں سے کہاکہ ’’ہماری بین الاقوامی کارگذار صدر پروین توگاڑیہ آج 10 بجے دن سے لاپتہ ہیں ، اُن کا اتہ پتہ اور تحفظ و سلامتی کی ذمہ داری انتظامیہ پر عائد ہوتی ہے ‘‘ ۔ انھوں نے کہاکہ ہنوز یہ توثیق نہیں ہوسکی ہے کہ توگاڑیہ کو آیا گرفتار کیا گیا ہے یا نہیں ۔ تاہم بی جے پی ترجمان جئے شاہ نے دعویٰ کیا کہ توگاڑیہ کو ایک قدیم مقدمہ کے ضمن میں راجستھان پولیس نے حراست میں لیا ہے ۔ انھوں نے یہ دعویٰ بھی کیا کہ ’’ہمارے قائد پروین توگاڑیہ کسی قدیم مقدمہ میں زیرحراست ہیں ، اور انھیں شہر کے پالڈی علاقہ میں واقعہ وی ایچ پی کے ریاستی ہیڈکوارٹرس سے راجستھان پولیس نے اُٹھا لیا تھا ‘‘ ۔ تاہم راجستھان پولیس نے توگاڑیہ کی حراست یا گرفتاری کی تردید کی ہے ۔ انسپکٹر جنرل پولیس بھرت پور رینج الوک کمار وشسٹھا نے کہا کہ ’’ہماری ٹیم نے توگاڑیہ کو گرفتار نہیں کیا ، میری اطلاعات کے مطابق گنگاپور (راجستھان) پولیس ٹیم اُن کی گرفتاری کے وارنٹ پر تعمیل کے بغیر واپس ہورہی ہے کیونکہ وہ (توگاڑیہ ) احمدآباد میں نہیں پائے گا ۔ یہ افواہ بھی ہے کہ توگاڑیہ ہماری تحویل میں ہیں جو کسی بھی صورت میں صحیح نہیں ہے ‘‘۔ گنگاپور ٹاؤن راجستھان کے ضلع سوائے مادھوپور میں واقع ہے اور ریاستی پولیس کے بھرت پور رینج کے تحت آتا ہے ۔ سولہ پولیس کے عہدیداروں نے کہاکہ راجستھان پولیس نے توگاڑیہ کے خلاف گرفتاری کے وارنٹ پر تعمیل کیلئے اُن سے مدد طلب کی ہے ۔ سولہ پولیس اسٹیشن کے انسپکٹر جے ایس پٹیل نے کہا کہ ’’راجستھان پولیس نے پروین توگاڑیہ کے خلاف گرفتاری وارنٹ پر تعمیل کیلئے ہماری مدد طلب کی ہے ، کیونکہ اُن کی رہائش گاہ ہمارے علاقہ میں واقع ہے ۔ راجستھان پولیس کو ہم توگاڑیہ کی رہائش گاہ لے گئے تھے لیکن وہ وہاں نہیں پائے گئے‘‘ ۔ انھوں نے کہاکہ توگاڑیہ کے نہ ملنے کے بعد راجستھان پولیس ٹیم واپس چلی گئی ۔ انسپکٹر نے مزید کہا کہ ’’یہ درست نہیں ہے کہ وہ ہماری تحویل میں ہیں ، اور ہم اُن کا اتہ پتہ نہیں جانتے ‘‘ ۔ وی ایچ پی کے تقریباً 40 کارکنوں کا ایک گروپ 4 بجے شام سولہ پولیس اسٹیشن کا محاصرہ کیا اور اپنے کارگذار صدر کی رہائی کیلئے نعرہ لگائے ۔ بعد ازاں وی ایچ پی کارکنوں کے دوسرے گروپ نے مصروف سرکھیج ۔ گاندھی نگر ہائی وے کی ناکہ بندی کی ، لیکن پولیس نے احتجاج کو ختم کروادیا ۔

TOPPOPULARRECENT