Thursday , December 13 2018

دوبدو پروگرام ہندو طبقہ کیلئے بھی قابل تقلید، سنگیتا ریڈی کا تاثر

سیاست کی شعور بیداری مہم کی بدولت لین دین کے بغیر شادیوں کا انعقاد خوش آئند، جناب زاہد علی خان کا خطاب

سیاست کی شعور بیداری مہم کی بدولت لین دین کے بغیر شادیوں کا انعقاد خوش آئند، جناب زاہد علی خان کا خطاب

حیدرآباد ۔ 25؍ مئی ( (دکن نیوز) جناب زاہد علی خان ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے آج اس بات پر زور دیا کہ نئی ریاست تلنگانہ میں ہندو مسلم اتحاد ‘ رواداری اورگنگا جمنا تہدیب کی اعلی روایتوں کو زندہ رکھا جاناچاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری 400 برس کی تاریخ گواہ ہے کہ اس علاقہ کے عوام نے فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو ہمیشہ پروان چڑھا یا ‘ چارمینار اسی گنگا جمنا تہذیب کی علامت ہے اس کے چاروں مینار ہندو مسلم سکھ عیسائی آپس میں بھائی بھائی کی علامت ہے ۔ انہوں نے دوبدو پروگرام کے مقاصد کو واضح کرتے ہوئے کہاکہ ہمارا مقصد شادی کو آسان بنانا اور شادی تقاریب میں سادگی کو اختیار کرنا ہے ۔

اسراف و فضول خرچی کے باعث شادیوں میں ہماری معیشت کمزور ہوتی جا رہی ہے ۔ اور معیشت کے کمزور ہونے کے باعث ہمارا سماجی وسیاسی وقار موقف کمزور ہوتے جا رہا ہے جس کی مثال حالیہ انتخابات ہیں جس میں صرف 22 مسلم اُمیدوار منتخب ہوئے ۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم تعلیمی اور معاشی حیثیت سے اپنے آپ کو مضبوط کریں اور غیر اسلامی روایات کو ترک کردیں ۔ وہ آج ایس ڈی آر گارڈن راجندرنگر میں دوبدو پرگرام کو مخاطب کر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ دارہ سیاست نے صرف معاشرہ کی صلاح بلکہ مسلم نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی کے لئے کئی اقدامات کئے ہیں ۔ پولیس میں بھرتی کے لئے سیاست کے زیر اہتمام منعقدہ تربیت سے500 نوجوانوں کو روزگار حاصل ہوا اس کے علاوہ کئی مسابقتی امتحانات کے لئے سیاست نے وسیع پیمانے پر کوچنگ کا بھی اہتمام کیا اس وقت سیاست و ایم ڈی ایف کے زیر اہتمام دونوں شہروں میں 56 ووکیشنل مراکز میں سمر کیمپ کے تحت کئی شعبہ جات میں مسلم لڑکوں و خواتین کو عملی تربیت دی جا رہی ہے ۔ صحت و تندرستی کے لئے مسلم معاشرہ میں بیداری پیدا کرنے مقصد سے میڈیکل کیمپس ‘ یوگا کیمپس ‘ اور حجامہ کیمپس منعقد کئے جاتے ہیں ۔ انہوں نے اس موقع پر اپولوہاسپٹل کی چیف ایگزیکیٹیو سنگیتا ریڈی کو مشورہ دیا کہ وہ ایم ڈی ایف کے تعاون و اشتراک سے غریب بستیوں میں میڈیکل کیمپس منعقد کریں اس کے علاوہ تلنگانہ کے دیگر اضلاع میں بھی اس نوعیت کے کیمپس ہونے چاہئے ۔ سنیئر ٹی آر ایس لیڈر جناب محمود علی رکن قانون ساز کونسل نے کہا کہ جناب زاہد علی خان کی قیادت و رہنمائی میں مسلم مسائل کو حل کرنے کے لئے عملی اقدامات کئے جا رہے ہیں جو قابل تحسین ہیں۔ انہوں نے کہاکہ مسلم نوجوانوں میںاعلی تعلیم کا ذوق و شوق کو پیدا کرنے کیالئے سیاست کی جانب سے کوچنگ کلاسس اور دیگر تربیتی پروگرام ہو رہے ہیں ۔

انہوں نے دوبدو ملاقات پروگرام کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ یہ پروگرام اب کافی مقبول ہوچکا ہے ۔ اور انہیں معلوم ہواکہ اس پروگرام کے ذریعہ کئی رشتے طئے پاچکے ہیں ۔ ڈاکٹر سنگیتا ریڈی سی ای او اپولو ہاسپٹلس نے کہا کہ ماضی میں آبادی کم ہونے کے باعث شادیاں بڑی آسانی سے طئے پاتی تھیں لیکن آج صورتحال اس کے برعکس ہوچکی ۔ انہوں نے کہا کہ وہ کونسلنگ مراکز کا معائنہ کرنے کے بعد بہت خوش ہوئیں اور وہ چاہتی ہیں کہ ہندو طبقہ میں شادیوں کے لئے اس طرح کے پروگرام منعقد کئے جائیں۔ انہو ں نے کہا کہ وہ اب نئی ریاست تلنگانہ میں ہماری مشترکہ تہذیب کو فروغ حاصل ہوگا جس سے تمام طبقات کے لئے ترقی کے امکانات پیدا ہوں گے۔ انہوں نے جناب زاہد علی خان اور ایم ڈی ایف کی کوششوں کو وقت کی ضرورت قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ اس پروگرام سے بے حدمتاثر ہوئی ہیں ۔ انہوں نے تیقن دیا کہ اپولو ہاسپٹل اور ایم ڈی ایف کے اشتراک سے پسماندہ علاقوں میں میڈیکل کیمپس قائم کئے جائیں گے ۔ جناب عابد صدیقی صدر ایم ڈی ایف نے ابتداء میں ایم ڈی ایف و سیاست کی سرگرمیوں کا جائزہ لیتے ہوئے کہا کہ اب تک ہماری کوششوں سے 400 سے زائد شادیاں طئے پاچکی ہیں اور کئی خاندان لین دین اور دیگر خرافات سے گریز کرنے لگے ہیں جو ایک خوش آئند علامت ہے۔ انہوں نے کہا کہ شادی کے دن کے کھانے کے بائیکاٹ کی تحریک وسعت اختیار کرتے جا رہی ہے جسے جناب زاہد علی خان نے آغاز کیا تھا ۔ اس تحریک کے نہایت ثمر آور نتائج برآمد ہو رہے ہیں ۔ ابتداء میں جناب حمید اللہ خالد صدر ٹی آر ایس میناریٹی راجندرنگر نے خیرمقدمی تقریر کی ۔

جناب سہیل انور جنرل سکریٹری نے مہمانوں کا خیرمقدم کیا ۔ اس تقریب میں سینئر ٹی آر ایس لیڈر سامبا دامودھرریڈی ‘ مسٹر پرشوتم راؤ‘ ڈاکٹر گوتم ریڈی‘ جناب سلیم فاروقی (جدہ) حبیب حسین حیات‘ سید اصغر حسین‘ صالح بن عبداللہ باحاذق ‘ سید لائق (ٹی آر ایس لیڈر) اور دیگر مہمانوں نے شرکت کی۔ جلسہ کا آغاز ڈاکٹر محمد ایوب حیدری کی قرأت کلام پاک سے ہوا۔ جناب خواجہ معین الدین جنرل سکریٹری نے باگارہ رسالت میں نعت شریف پیش کی ۔ دوبدو پروگرام کے انتظامات اور کونسلنگ میں جناب احمد صدیق مکیش ‘ محمد نصر اللہ خان ‘ ریحانہ نواز ‘ کوثر جہاں ‘ عبدالصمد خان‘ سید ناظم الدین ‘ عابدہ بیگم‘ محمد احمد‘ ترنم ثناء‘ وحید خاتون ‘ محمد سمیع الدین ‘ خالدہ خاتون ‘سید عمران اور دوسروں نے اس پروگرام میں حصہ لیا۔ جناب زاہد فاروقی کی نگرانی میں کمپیوٹر سیکشن میں 10 کمپیوٹرس لگائے گئے تھے جن سے والدین و سرپرستوں نے استفادہ کیا ۔ مقامی ٹی آر ایس قائدین نے جناب زاہد علی خان اور دیگر مہمانوں کو شال پیش کی اور دوبدو پروگرام کے منعقد کرنے پر اظہار تشکر کیا ۔ 31 ویں دوبدو ملاقات پروگرام سے آج تقریباً 2000 والدین و سرپرستوں نے استفادہ کیا ۔ لڑکیوں کے 110 اور لڑکوں کے 51 رجسٹریشن ہوئے ۔ ایم ڈی ایف کی جانب سے محکمہ پولیس‘ ان تمام سرپرستوں کا جنہوں نے اس پروگرام میں حصہ لیا اظہار تشکر کیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT