Wednesday , September 19 2018
Home / کھیل کی خبریں / دوسرا ٹسٹ ڈرا، ہندوستان کو ٹسٹ سیریز میں بھی 0-1 کی شکست

دوسرا ٹسٹ ڈرا، ہندوستان کو ٹسٹ سیریز میں بھی 0-1 کی شکست

٭ مکالم نیوزی لینڈ کیلئے ٹرپل سنچری اسکور کرنے پہلے بیٹسمین ٭ دوسری اننگز میں کوہلی کی سنچری، ظہیرخان کو 5 وکٹیں ٭ دھونی کی ٹیم کے مایوس کن دورۂ نیوزی لینڈ کا اختتام

٭ مکالم نیوزی لینڈ کیلئے ٹرپل سنچری اسکور کرنے پہلے بیٹسمین
٭ دوسری اننگز میں کوہلی کی سنچری، ظہیرخان کو 5 وکٹیں
٭ دھونی کی ٹیم کے مایوس کن دورۂ نیوزی لینڈ کا اختتام
ویلنگٹن ۔ 18 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان کرکٹ ٹیم نے آج دورۂ نیوزی لینڈ کا آج مایوس کن اختتام کرلیا جیسا کہ یہاں منعقدہ دوسرا ٹسٹ ڈرا ہوا جبکہ اس مقابلے میں نتیجہ حاصل نہ ہونے کی وجہ سے نیوزی لینڈ نے 2 مقابلوں کی سیریز 1-0 سے اپنے نام کرلی۔ نیوزی لینڈ کیلئے مین آف دی میچ کپتان برنڈن مکالم نے تاریخ ساز 302 رنز اسکور کئے جبکہ بی جے واٹلنگ نے 124 رنز اور نیوزی لینڈ کے لئے اپنے ٹسٹ کیریئر کا آغاز کرنے والے آل راونڈر جیمس نیشم نے ناقابل تسخیر 137 رنز کی اننگز کھیلی اور میزبان ٹیم نے 8 وکٹوں کے نقصان پر 680 رنز کے ہمالیائی اسکور پر اپنی دوسری اننگز ختم کرتے ہوئے ہندوستان کو کامیابی 435 رنز کا ایک مشکل نشانہ دیا۔ نشانہ کے تعاقب میں ہندوستانی ٹیم کو ابتدائی لمحات میں کچھ جھٹکے برداشت کرنے پڑے،

تاہم 52 اوورس میں مہمان ٹیم نے 3 وکٹوں کے نقصان پر 166 رنز اسکور کئے جس کے بعد دونوں کپتانوں نے یہ فیصلہ کیا کہ مقابلہ میں نتیجہ حاصل کرنا ناممکن ہے لہٰذا ٹسٹ کے ڈرا کے نتیجہ کو قبول کرلیا جائے۔ اس موقع پر ویراٹ کوہلی امپائر کے ایک ناقص فیصلے سے خود کو ملنے والے موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے غیرمفتوح 105 رنز اسکور کرتے ہوئے کیریئر کی چھٹی سنچری اسکور کی جبکہ دوسرے ناٹ آوٹ بیٹسمین روہت شرما نے 97 گیندوں میں 4 چوکوں کی مدد سے 131 رنز اسکور کئے۔ ہندوستان کی دوسری اننگز میں پہلے آوٹ ہونے والے کھلاڑی شکھردھون رہے جوکہ 10 گیندوں میں 2 رنز بنانے کے بعد ٹرینٹ بولٹ کی گیند پر امپائر کے غلط فیصلہ کا شکار بنے۔ دریں اثناء مرلی وجئے 22 گیندوں میں ایک چوکے کی مدد سے 7 رنز اسکور کرنے کے بعد ٹم ساؤتھی کا شکار بنے جن کا اینڈرسن نے کیچ پکڑا۔

ساؤتھی نے بعدازاں وکٹوں کے پیچھے واٹلنگ کے ہاتھوں چیٹیشور پجارا کو 17 رنز کے انفرادی اسکور پر آوٹ کروایا جنہوں نے 50 گیندوں پر مشتمل اپنی اننگز میں 3 چوکے لگائے۔ ساؤتھی نے 50 رنز کے عوض 2 اور بولٹ نے 47 رنز کے عوض ایک ہندوستانی کھلاڑی کو پویلین کی راہ دکھائی۔ دوسرا ٹسٹ میزبان کپتان برنڈن مکالم کے کیریئر میں ہمیشہ یاد رکھا جائے گا جیسا کہ انہوں نے اپنے ملک نیوزی لینڈ کے لئے ٹرپل سنچری اسکور کرنے والے پہلے بیٹسمین کا اعزاز حاصل کرلیا۔ اس مظاہرہ سے قبل سابق کپتان مارٹن کرو کے نام سری لنکا کے خلاف 1991ء میں اسی میدان پر 299 رنز کی اعظم ترین انفرادی اننگز کھیلنے کا اعزاز درج تھا۔ علاوہ ازیں نمبر 5 پر بیٹنگ کرتے ہوئے سب سے زیادہ رنز بنانے کی فہرست میں مکالم 302 رنز کے ساتھ تیسرا مقام حاصل کرلیا ہے جیسا کہ آسٹریلیائی کپتان مائیکل کلارک نے 2012ء میں ہندوستان کے خلاف ناقابل تسخیر 329 رنز کی اننگز کھیلی ہے

جبکہ سربراڈمین نے 1934 میں انگلینڈ کے خلاف نمبر 5 پر بیٹنگ کرتے ہوئے 304 رنز کی اننگز کھیلی تھی۔ مکالم کے علاوہ آل راونڈر نیشم کیلئے بھی یہ مقابلہ ریکارڈ ساز رہا کیونکہ انہوں نے ناقابل شکست 137 رنز کے ذریعہ پہلے ہی ٹسٹ میں اعظم ترین انفرادی اسکور کا ریکارڈ اپنے نام کرلیا ہے۔ اس سے قبل یہ ریکارڈ پاکستان کے سابق آل راونڈر اظہرمحمود کے نام تھا جنہوں نے 1997ء میں جنوبی افریقہ کے خلاف 128 رنز کی ناٹ آوٹ اننگز کھیلی تھی۔ علاوہ ازیں نیشم نے نیوزی لینڈ کیلئے بھی پہلے ہی ٹسٹ میں اعظم ترین انفرادی اسکور کا نام اپنے نام کرلیا ہے چونکہ اس سے قبل یہ ریکارڈ اسکاٹ اسٹائیرس کے نام تھا، جنہوں نے ویسٹ انڈیز کے خلاف 2002 میں اپنے پہلے ہی ٹسٹ میں 107 رنز کی اننگز کھیلی تھی۔ دوسری اننگز میں ہندوستان کیلئے ظہیرخان نے 170 رنز کے عوض 5 کھلاڑیوں کو آوٹ کیا جبکہ محمد سمیع نے 2 وکٹیں اپنے نام درج کی۔ واضح رہیکہ ٹسٹ سیریز میں 0-1 سے قبل 5 ونڈے مقابلوں کی سیریز میں بھی ہندوستان کو 0-4 کی شکست برداشت کرنی پڑی تھی۔

TOPPOPULARRECENT