Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / دوسروں پر تنقید سے قبل اپنے محاسبہ کا مشورہ

دوسروں پر تنقید سے قبل اپنے محاسبہ کا مشورہ

حیدرآباد /16 جولائی (سیاست نیوز) صدر تلنگانہ پردیش کانگریس پنالہ لکشمیا نے پارٹی قائدین کی جانب سے ان پر کی جانے والی تنقیدوں کو مسترد کرتے ہوئے انھیں اپنے محاسبہ کا مشورہ دیا۔ واضح رہے کہ کانگریس کی جانب سے علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دینے کے بعد تلنگانہ میں پارٹی کی شکست کے لئے پنالہ لکشمیا کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور ان کے

حیدرآباد /16 جولائی (سیاست نیوز) صدر تلنگانہ پردیش کانگریس پنالہ لکشمیا نے پارٹی قائدین کی جانب سے ان پر کی جانے والی تنقیدوں کو مسترد کرتے ہوئے انھیں اپنے محاسبہ کا مشورہ دیا۔ واضح رہے کہ کانگریس کی جانب سے علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دینے کے بعد تلنگانہ میں پارٹی کی شکست کے لئے پنالہ لکشمیا کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے اور ان کے خلاف پارٹی ہائی کمان سے شکایت بھی کی گئی، تاہم صدر پردیش کانگریس نے دہلی پہنچ کر ہائی کمان کو شکست کی وجوہات پر مشتمل 8 صفحات کا مکتوب حوالے کیا۔ آج انھوں نے کہا کہ وہ چیف منسٹر تلنگانہ کے متبادل نہیں ہیں، جب کہ مجھ پر الزام عائد کرنے والے قائدین خود کے سی آر کا متبادل بننے کے لئے جی جان سے کوشش کر رہے ہیں۔ ذرائع کے بموجب قائد اپوزیشن کے جانا ریڈی اور پنالہ لکشمیا کے درمیان سرد جنگ چل رہی ہے۔ جانا ریڈی کانگریس ارکان اسمبلی کا اجلاس طلب کرکے مستقبل کی حکمت عملی تیار کر رہے ہیں، جس کے جواب میں صدر تلنگانہ پردیش کانگریس نے 17 جولائی کو پارٹی کے اہم قائدین پردیش کانگریس اور اضلاع کے سکریٹریز و ترجمان کا ایک ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے، جس میں ٹی آر ایس حکومت کے ڈیڑھ ماہ کی کار کردگی کا جائزہ لینے کے بعد پارٹی کے استحکام کی حکمت عملی تیار کی جائے گی۔

صدر ٹی پی سی سی پونالہ لکشمیا سے اختلاف کی تردید
تلنگانہ کانگریس میں کوئی مسابقت نہیں، کے جانا ریڈی قائد مقننہ کا بیان
حیدرآباد /16 جولائی (سیاست نیوز) کانگریس کے قائد مقننہ کے جانا ریڈی نے صدر پردیش کانگریس سے اختلاف اور پارٹی میں مسابقت کی تردید کی۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس اقتدار میں نہیں، بلکہ اپوزیشن میں ہے، لہذا پارٹی قائدین میں مسابقت کا کوئی سوال ہی نہیں پیدا ہوتا۔ انھوں نے کہا کہ ان کا کوئی گروپ نہیں ہے اور نہ ہی بشمول صدر پردیش کانگریس کسی سے کوئی اختلاف ہے۔ اختلاف کی صرف افواہ ہے، جس کی کوئی حقیقت نہیں ہے۔ انھوں نے کہا کہ انھوں نے کانگریس کے ٹکٹ پر کامیاب ہونے والے ارکان اسمبلی کی خواہش پر ملاقات کا پروگرام بنایا تھا، جس کے پیچھے سیاسی مقاصد نہیں ہیں اور نہ ہی ارکان اسمبلی سے ملاقات کا غلط مطلب نکالنے کی ضرورت ہے، علاوہ ازیں ارکان اسمبلی سے ملاقات کا پروگرام منسوخ کردیا گیا۔ انھوں نے کہاکہ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس پنالہ لکشمیا کی جانب سے پارٹی کے مستقبل کی حکمت عملی تیار کرنے کے لئے قائدین کا اجلاس طلب کرنے پر انھیں کوئی اعتراض نہیں ہے اور نہ ہی وہ اجلاس کے خلاف ہیں، تاہم دونوں کے درمیان مسابقت کی افواہ پھیلائی جا رہی ہے، جسے ہم دونوں مل کر دور کردیں گے۔ انھوں نے کہا کہ ہم دونوں مل کر عوامی مسائل پر متحدہ کام کریں گے اور اس کی یکسوئی کے لئے تلنگانہ حکومت پر دباؤ ڈالیں گے۔ علاوہ ازیں کانگریس قائدین کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کرکے اپنے اتحاد کا ثبوت پیش کریں گے اور پارٹی کارکنوں میں نیا جوش و خروش پیدا کرنے کے لئے تمام اقدامات کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT