دوسری شکست کے ساتھ ہندوستان پہلے مقام سے محروم

o ہیملٹن ونڈے میں دھونی کی ٹیم کو 15 رنز کی ناکامی o اوپنرس ناکام ، کوہلی اور دھونی کی نصف سنچری رائیگاں

o ہیملٹن ونڈے میں دھونی کی ٹیم کو 15 رنز کی ناکامی
o اوپنرس ناکام ، کوہلی اور دھونی کی نصف سنچری رائیگاں
ہیملٹن ۔ 22 جنوری ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) نیوزی لینڈ کے خلاف یہاں ہیملٹن کے سیڈن پارک میں منعقدہ دوسرے ونڈے میں ہندوستانی ٹیم کو بارش سے متاثرہ مقابلے میں ڈک ورتھ لوئیس نظام کے تحت 15 رنز کی شکست برداشت کرنی پڑی اور اسطرح رواں سیریز میں متواتر دوسری شکست کے بعد مہندر سنگھ دھونی کی زیرقیادت ہندوستانی ٹیم کو آئی سی سی کی درجہ بندی میں اپنا پہلا مقام گنوانا پڑا ہے اور اب آسٹریلیا دنیا کی دوبارہ نمبر ایک ٹیم بن گئی ہے ۔ مہمان ٹیم کے کپتان دھونی نے ٹاس جیت کر میزبان ٹیم کو پہلے بیٹنگ کیلئے مدعو کیا اور نیوزی لینڈ نے اپنے ٹاپ آرڈر بیٹسمینوں کے شاندار مظاہروں اور مڈل آرڈر میں جیمس کورے اینڈرسن کی برق رفتار بیٹنگ کی بدولت 42 اوورس فی اننگز کے اس مقابلے میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 271 رنز اسکور کئے ۔ بعد ازاں اسکور کو ڈک ورتھ لوئیس نظام کے تحت نظرثانی کرتے ہوئے ہندوستانی ٹیم کو کامیابی کے لئے 297 رنز کا نشانہ دیا گیا ۔ جوابی اننگز میں ہندوستان کو اپنے اوپنرس کا پھر ایک مرتبہ جلد نقصان برداشت کرنا پڑا جیسا کہ 22 کے مجموعی اسکور پر شیکھر دھون 22گیندوں میں 2 چوکوں کی مدد سے 12 رنز بناکر ٹم ساؤتھی کی گیند پر بولڈ ہوئے ۔د وسرے اوپنر روہت شرما جنھوں نے کسی قدر اس مقابلے میں بہتر بیٹنگ کا اشارہ دیا تاہم وہ 34 گیندوں میں 2 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 20 رنز اسکور کئے ۔ ویراٹ کوہلی اور نمبر 4 پر اجنکیا راہنے بہتر مظاہرہ کرتے ہوئے ٹیم کو مقابلے میں واپس لانے کی کوشش کی لیکن حریف فاسٹ بولر میک گلین ہاگن نے ایک باؤنسر کے ذریعہ راہنے کو وکٹوں کے پیچھے کیچ آوٹ کروایا ۔

راہنے نے 42گیندوں میں 4 چوکوں کی مدد سے 36 رنز اسکور کرنے کے علاوہ کوہلی کے ہمراہ تیسری وکٹ کیلئے 90 رنز کی رفاقت نبھائی ۔ ہندوستان کے لئے کوہلی نے پھر ایک مرتبہ 65 گیندوں میں 7 چوکوں اور 2 چھکوں کی مدد سے 78 رنز اسکور کئے اور کپتان دھونی کے ہمراہ صرف 37 رنز کا چوتھی وکٹ کیلئے اضافہ کرنے میں کامیاب رہے ۔ دھونی اور سریش رائنا کے درمیان 5 ویں وکٹ کیلئے 6.3 اوورس میں 62 رنز کی پارٹنرشپ نے ٹیم کی امید کو تقویت دی لیکن اس موقع پر رائنا 22 گیندوں میں 6 چوکوں کی مدد سے 35 رنز بناکر آؤٹ ہوئے ۔ دھونی نے 44گیندوں میں 7 چوکوں اور ایک چھکے کے ذریعہ 56 رنز اسکور کئے ۔ حالانکہ انھیں نصف سنچری کی تکمیل سے قبل ایک موقع اس وقت ملا تھا

جب باؤنڈری لائن پر ساؤتھی نے ان کا کیچ چھوڑا ۔ 257 رنز کے مجموعی اسکور پر دھونی کے آؤٹ ہونے کے بعد ہندوستان کی کامیابی کی امید ختم ہوگئی ۔ نیوزی لینڈ کیلئے ساؤتھی نے 72رنز کے عوض 4 اور اینڈرسن نے 67 رنز کے عوض3 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ قبل ازیں مین آف دی میچ کیین ویلم سن (77) اور راس ٹیلر (57) کی نصف سنچریوں کے علاوہ اوپنر مارٹن گپٹل کے 44 رنز اور اینڈرسن کے 17گیندوں میں 2 چوکوں اور 5 چھکوں کی مدد سے 44 رنز کی بدولت نیوزی لینڈ نے 271/7 اسکور بنایا ۔ اینڈرسن آج 17 گیندوں میں تیز رفتار نصف سنچری کا ریکارڈ بھی اپنے نام کرنے کے قریب پہونچ گئے تھے تاہم جس گیند پر انھیں ریکارڈ بنانے کیلئے چھکا درکار تھا اُسی گیند پر وہ باؤنڈری کے قریب شکھر دھون کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے ۔ ہندوستان کیلئے محمد سمیع نے 55 رنز کے عوض 3 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جس میں اہم موقع پر ایک ہی اوور میں ٹیلر اور برینڈن میکالم کی وکٹیں بھی شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT