Tuesday , January 23 2018
Home / شہر کی خبریں / دوسرے مرحلہ کی رائے دہی پرامن

دوسرے مرحلہ کی رائے دہی پرامن

نئی دہلی ۔ 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) شمال مشرقی چار ریاستوں منی پور، ناگالینڈ، میگھالیہ اور اروناچل پردیش کے 6 لوک سبھا حلقوں میں رائے دہی مجموعی طور پر پرامن رہی۔ اس کے علاوہ اروناچل پردیش کی 80 رکنی اسمبلی کیلئے بھی رائے دہی ہوئی جس میں عوام کی کثیر تعداد نے حق رائے دہی سے استفادہ کیا۔ کئی پولنگ بوتھ پر عام کی طویل قطاریں دیکھی گئی۔ من

نئی دہلی ۔ 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) شمال مشرقی چار ریاستوں منی پور، ناگالینڈ، میگھالیہ اور اروناچل پردیش کے 6 لوک سبھا حلقوں میں رائے دہی مجموعی طور پر پرامن رہی۔ اس کے علاوہ اروناچل پردیش کی 80 رکنی اسمبلی کیلئے بھی رائے دہی ہوئی جس میں عوام کی کثیر تعداد نے حق رائے دہی سے استفادہ کیا۔ کئی پولنگ بوتھ پر عام کی طویل قطاریں دیکھی گئی۔ منی پور لوک سبھا حلقہ میں 70 فیصد اور میگھالیہ کے دو حلقوں میں 64 فیصد رائے دہی ریکارڈ کی ۔ ناگالینڈ میں 82.5 فیصد رائے دہی ریکارڈ کی گئی۔ میگھالیہ میں ممنوعہ علحدگی پسند گروپ کے 12 گھنٹے بند کی عوام نے پرواہ نہیں کی اور رائے دہی میں حصہ لیا۔

آج تیسرے مرحلہ کی رائے دہی
نئی دہلی ۔ 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) شمال مشرقی ریاستوں میں پہلے دو مرحلے کی رائے دہی کے کامیاب انعقاد کے بعد کل تیسرے مرحلہ کی رائے دہی مقرر ہے جس میں کئی اہم ریاستیں مہاراشٹرا، کیرالا اور اوڈیشہ شامل ہیں۔ تیسرے مرحلہ کی رائے دہی میں 1419 امیدوار مقابلہ میں شریک ہیں اور کئی اہم قائدین بشمول کمل ناتھ، میرا کمار، نتن گڈکری،ششی تھرور اور گل پناگ کے علاوہ کپل سبل کی سیاسی قسمت کا فیصلہ ہوگا۔ 11 ریاستوں اور 3 مرکزی زیرانتظام علاقوں کے 91 لوک سبھا حلقوں پر کل ہونے والی رائے دہی کیلئے الیکشن کمیشن نے تمام انتظامات پورے کرلئے ہیں اور سیکوریٹی بھی سخت کردی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT