Wednesday , September 19 2018
Home / عرب دنیا / دولت اسلامیہ زیرقبضہ آخری علاقہ پر حکومت کا قبضہ بحال

دولت اسلامیہ زیرقبضہ آخری علاقہ پر حکومت کا قبضہ بحال

قصبہ راوا سے دولت اسلامیہ کے جنگجوؤں کے تخلیہ کے بعد عوام میں اطمینان
راوا ( عراق ) ۔ 19نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) دولت اسلامیہ کا صوبہ فرات شاہراہیں اور قصبہ راوا میں دیکھی جاسکتی ہیں ‘ جس پر اب حکومت کا قبضہ بحال ہوگیا ہے ۔ سرکاری فوجوں نے دولت اسلامیہ کے جنگجوؤں کو عراق میں ان کے آخری مستحکم گڑھ سے نکال باہر کیا ہے ۔ اب صرف ان کے بیانرس ان کی یاد دلاتے ہیں جن پر وسیع ’’ خلافت ‘‘ کے نعرے تحریر ہیں ۔ اس علاقہ پر کبھی جہادیوں کا اقتدار تھا ۔ 13سالہ حمزہ محمود نے اپنی نوجوانی میں دولت اسلامیہ کا اس علاقہ پر قبضہ دیکھا ہے ۔ اُن کے سخت مطالبات اور مضبوط گرفت کا مشاہدہ کیا ہے ۔ شام کی سرحد پر واقع ریگستانی علاقہ میں دولت اسلامیہ کا طویل مدت تک قبضہ برقرار رہا ہے ۔ 2014ء میں دولت اسلامیہ نے اس قصبہ پر قبضہ کرلیا تھا ۔ اس دن سے وہ ایک دن کیلئے بھی اسکول نہیں جاسکا ۔ لوگوں کو لمبی داڑھیاں پڑتا تھا اور روایتی لباس جس میں ان کے ٹخنے تک پوشیدہ ہوتے تھے پہننا پڑتا تھا ‘ ورنہ انہیں 20کوڑے مارے جاتے تھے ۔ حمزہ محمود نے جو ایک شوخ رنگ کے زرد پل اوور میں ملبوس تھا اور جس کے سینے پر تحریر تھا اطالوی قومی فٹبال ٹیم نے کہا کہ جہادیوں کے دور اقتدار میں راوا اور مضافاتی دیہاتوں کے عوام کو ایک عمارت میں قصبہ کے باب الداخلہ کے قریب جمع ہونا پڑتا تھا اور اُن سے کہا جاتا تھا کہ جہادی اس علاقہ پر خونریز حملہ کر کے اُس پر قبضہ کرچکے ہیں ۔ یہ اجتماع جہادیوں کے دور اقتدار کی یاد دہانی کا مقصد رکھتا تھا ۔ تین سال تک یہاں کے عوام برقی روشنی ‘ ٹیلیفون اور ٹی وی سے محروم رہے ۔ ایک 67 سالہ شخص نے جو سفید لباس میں ملبوس تھا کہا کہ جب عراق کی سرکاری فوجیں جمعہ کے دن راوا میں داخل ہوئیں تو لوگوں نے اطمینان کی سانس لی اور اُن کا پورے سرحدی علاقہ میں خیرمقدم کیا ۔ دولت اسلامیہ آخری دیہات سے تخلیہ کرچکی تھی ۔ اب صرف سرکاری فوج اس عراقی گاؤں کو جہادیوں کی گرفت سے آزادی دلواچکی ہیں اور اس پر حکومت کا قبضہ ہے لیکن دولت اسلامیہ کے جنگجوؤں کا خوف عوام پر اب بھی طاری ہے ۔ دولت اسلامیہ کے جنگجو سرکاری فوج کی پیشرفت اور امریکی زیرقیادت اتحادی افواج کے فضائی حملوں کا سامنا کرنے کے بجائے دیہات سے فرار ہوچکی ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT