Tuesday , December 12 2017
Home / دنیا / دولت اسلامیہ کو مالیہ فراہم کرنے والامشتبہ شخص گرفتار

دولت اسلامیہ کو مالیہ فراہم کرنے والامشتبہ شخص گرفتار

اسپین میں گرفتاری اور برطانیہ کی درخواست پر منتقلی ‘لندن میں تیزاب حملہ ‘6افراد زخمی
لندن، ستمبر 24 (سیاست ڈاٹ کام) ایک بنگلہ دیشی نژاد تاجر کو جو ویلس کا ساکن ہے اسپین میں گرفتار کرلیا گیا ‘ کیونکہ وہ دولت اسلامیہ کو دنیا بھر سے مالیہ فراہم کرنے میں ملوث تھا ۔ اس کا پتہ برطانوی ذرائع ابلاغ نے چلایا تھا ۔ عطاالحق سمجھا جاتا ہے کہ دولت اسلامیہ کی ہراول کمپنیوں سے روابط رکھتا تھا اور ان کے ذریعہ دولت اسلامیہ کو مالیہ فراہم کرتا تھا ۔ اسپینی پولیس نے الزام عائد کیا ہے کہ 34سالہ شخص انتہائی خفیہ اور جدید ترین طریقے اختیار کرتے ہوئے دولت اسلامیہ کی شاخیں دنیا بھر میں قائم کررہا تھا اور اس کا مقصد بغیر پائیلٹ کے جنگجو ڈرون طیارے تیار کرنا تھا ۔ بالاکلیوا پولیس وردی میں ملبوس تھا اور جنوب مغربی اسپین کے علاقہ میراڈا میں اس کی قیام گاہ تھی جہاں سے اسے گرفتار کیا گیا ۔ بعدازاں اُس نے تحقیقاتی جج کے اجلاس پر میڈرڈ میں قومی فوجداری عدالت کے اجلاس پر اپنا بیان درج کروایا ۔ بین الاقوامی عدالت انصاف واقع ہیگ میں اس کے بھائی سیف پر مقدمہ چلایا گیا تھا ۔بعدازاں وہ شام منتقل ہوگیا اور وہاں دولت اسلامیہ کے اسلحہ ساز پروگرام میں ایک سینئر عہدیدار بن گیا اور بعدازاں ایک امریکی ڈرون حملہ میں 2015ء میں ہلاک ہوگیا تھا ۔

اس کی عمر ہلاکت کے وقت 31سال تھی ۔ سبحان اور اس کا بھائی دولت اسلامیہ کو مالیہ اور ہتھیار فراہم کرنے میں ملوث تھے۔دریں اثناء مشرقی لندن کے ایک شاپنگ سینٹر علاقے میں ہوئے تیزاب حملے میں 6افراد زخمی ہوگئے ہیں۔ پولیس ترجمان نے بتایا کہ گذشتہ رات ایک شاپنگ سنٹرکے علاقے میں کچھ نوجوانوں نے عوام پر خطرناک مادہ چھڑک دیا تھا، جس میں 6 افرادزخمی ہوئے تھے ۔ ترجمان نے کہا کہ یہ واقعہ کسی طرح کادہشت گردانہ حملہ نہیں ہے ۔ یہ حملہ اسٹریٹ فورڈسنٹرکے قریب ہوا۔لندن میٹروپولیٹن پولیس نے ایک بیان جاری کرکے کہا، ” الگ الگ مقامات پرہوئے حملوں میں متعدد افراد جھلس گئے ہیں۔اس حملے میں 6 افراد زخمی ہوگئے ہیں۔ ہم تفصیلی اطلاعات کے منتظر ہیں۔ ” انہوں نے کہا کہ اس حملے کے سلسلے میں ایک شخص کو گرفتار کیا گیا ہے او ر اس سے تفتیش کی جا رہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT