Thursday , November 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / دولت مشترکہ یوتھ گیمس : آخری دن ہندوستان کو مزید دو گولڈ میڈلس

دولت مشترکہ یوتھ گیمس : آخری دن ہندوستان کو مزید دو گولڈ میڈلس

جملہ 9 گولڈ ‘ چار سلور اور 6 برانز کے ساتھ میڈلس موقف میں پانچواں مقام حاصل ہوا
اپیا ( سموعہ ) 11 ستمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) دولت مشترکہ یوتھ گیمس میں ہندوستان نے بہترین کارکردگی دکھائی ہے اور اس نے یہاں چار کے منجملہ دو گولڈ میڈلس حاصل کرلئے ہیں اور اسے بحیثیت مجموعی میڈلس کے معاملہ میں پانچواں مقام حاصل ہوا ہے ۔ آج ان مقابلوں کا آخری دن تھا ۔ ہندوستان نے بوائز اینڈ گرلز زمرہ میں سنگلس خطاب جیتے ہیں۔ بوائز میں سسی کمار مکنڈ نے اور گرلز زمرہ میں دھروتی ٹاٹاچر ویگو گوپال نے خطاب جیتے ہیں۔ دونوں نے مکسڈ ڈبلز میں بھی کامیابی حاصل کی تھی ۔ ٹینس میں ہندوستان نے پانچ کے منجملہ تین گولڈ میڈلس جیتے ہیں۔ آج ہندوستان کو مزید دو گولڈ میڈلس حاصل ہوئے جس کے بعد اسے میڈلس کے معاملہ میں پانچواں مقام حاصل ہوا ہے ۔ ہندوستان نے جملہ 9 گولڈ ‘ چار سلور اور 6 برانز میڈلس جیتے ہیں۔ آسٹریلیا نے 24 گولڈ 19 برانز اور 19 سلور میڈلس کے ساتھ سر فہرست مقام حاصل کیا ہے ۔ جنوبی افریقہ نے 13 گولڈ 7 سلور اور 15 برانز میڈلس کے ساتھ دوسرا ‘ انگلینڈ نے 12 گولڈ 16 سلور اور 16 برانز کے ساتھ تیسرا مقام حاصل کیا ہے ۔ ملیشیا کو 11 گولڈ ‘ تین سلور اور تین برانز میڈلس کے ساتھ چوتھا مقام حاصل ہوا ہے ۔ دھروتی نے وومنس سنگلز خطابی مقابلہ میں نامیبیا کی لیسیڈی جیکبس کو شکست دیتے ہوئے خطاب جیت لیا ۔ انہوں نے 6 – 3, 6 – 0 سے کامیابی حاصل کی تھی ۔ انہوں نے میچ کے دوران طاقتور شاٹس لگائے اور مخالف کھلاڑی کہیں بھی ان کا بہتر انداز میں مقابلہ نہیں کرسکیں۔ دھروتی نے میچ کے بعد کہا کہ انہوں نے ہمیشہ پوری توجہ اور بہترین صلاحیتوں کے ساتھ مظاہرہ کیا ہے ۔ اور وہ سمجھتی ہیں کہ اسی وجہ سے انہیں کامیابی ملی ہے ۔ آج بھی یقینی طور پر انہوں نے بہترین ٹینس کا مظاہرہ کیا ہے ۔ مینس سنگلز فائنل میں مکنڈ نے اپنی تیز سرویس اور طاقتور شاٹس کے ذریعہ میچ پر گرفت بنائے رکھی تھی ۔ انہوں نے اسکاٹ لینڈ کے ایوین لمسڈین کے خلاف 6 – 1, 6 – 2 سے میچ جیت کر خطاب حاصل کرلیا ۔ مکنڈ نے کہا کہ اس میچ کیلئے وہ ابتداء سے پراعتماد تھے اور انہیں خوشی ہے کہ وہ اپنی توقع کے مطابق کامیابی حاصل کرسکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ ان کی شدید خواہش تھی اور انہوں نے پوری توجہ کے ساتھ مقابلہ کیا تھا اسی لئے انہیں کامیابی حاصل ہوئی ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT