Wednesday , September 19 2018
Home / ہندوستان / دولت کے غلط استعمال کا معاملہ سیتلواد کو گرفتاری پر ہائیکورٹ سے 2مئی تک راحت

دولت کے غلط استعمال کا معاملہ سیتلواد کو گرفتاری پر ہائیکورٹ سے 2مئی تک راحت

ممبئی ۔5 اپریل (سیاست ڈاٹ کام ) سماجی کارکن تیستا سیتلواد اور ان کے قریبی جاوید آنند نے کریمنل کیس میں راحت دیتے ہوئے ان کی گرفتاری پر بامبے ہائیکورٹ نے 2مئی تک پابندی لگادی ہے ۔ واضح رہے کہ تیستا سیتلواد اور جاوید آنند پر دولت کے غلط استعمال کے الزام میں گجرات پولیس نے مجرمانہ معاملہ درج کیا تھا ۔ جسٹس ریوتی موہتڈر نے یپشگی ضمانت کی عرضی پر سماعت کرتے ہوئے سماجی کارکن کو 2مئی تک گرفتاری پر پابندی عائد کردی‘ ساتھ ہی عدالت نے پیشگی ضمانت کی عرضی پر سماعت کرتے ہوئے سماجی کارکن کو جانچ ایجنسی کے سامنے حاضر ہونے اور اپنے موقف کی وضاحت کرنے اور ضرورت پڑنے پر دوبارہ حاضر ہونے کا حکم دیا ہے ۔ قابل ذکر ہیکہ احمدآباد کرائم برانچ نے گذشتہ ہفتہ سیتلواد اور آنند کے خلاف ان کی اپنی این جی او ( تنظیم ) سیرنگ ٹرسٹ کے تحت مرکزی حکومت سے 2008 سے 2013ء کے درمیان 1.4کروڑ روپئے دھوکہ دہی سے حاصل کرنے کا الزام لگایا ہے ۔ شکایت کے مطابق جس کے تحت معاملہ درج کیا گیا ہ اس میں اس بات کا تذکرہ ہے کہ گجرات اور مہاراشٹرا میں غریب بچوں کی تعلیم کی دستیابی اور 2000 کے فسادات کے متاثرین کو راحت کیلئے رقم مہیا کی گئی تھی لیکن دھوکہ دہی سے وہ رقم تیستا نے اپنے ذاتی مقاصد میں استعمال کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT