Wednesday , September 26 2018
Home / شہر کی خبریں / دونوں ریاستوں کے درمیان تنازعات کی مذاکرات کے ذریعہ یکسوئی

دونوں ریاستوں کے درمیان تنازعات کی مذاکرات کے ذریعہ یکسوئی

کرنول میں جشن آزادی کی تقریب، چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو کا خطاب

کرنول میں جشن آزادی کی تقریب، چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو کا خطاب
حیدرآباد /15 اگست (پی ٹی آئی) چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو نے آج بتایا کہ ان کی حکومت امریکہ میں واقع سلیکان ویلی کی طرح ریاست کو ترقی دینے اور زراعت کو منافع بخش بنانے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ سابق ریاست آندھرا کے دارالحکومت کرنول (متحدہ آندھرا پردیش سے قبل) میں جشن آزادی کی پہلی تقریب سے مخاطب کرتے ہوئے مسٹر نائیڈو نے یہ اشارہ دیا کہ وہ تلنگانہ کے ہم منصب کے ساتھ تمام تنازعات کی یکسوئی کے لئے مذاکرات کے لئے آمادہ ہیں، جو کہ تقسیم ریاست کے بعد پیدا ہوئے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ انفارمیشن ٹکنالوجی کے شعبہ میں سلیکان ویلی کے خطوط پر ریاست کو ترقی دی جائے گی اور آئندہ 5 سال کے دوران ریاست کے ہر ایک ضلع میں حیدرآباد یا سائبر جیسا ایک شہر بھی ہوگا، جس کے نتیجے میں 5 لاکھ روزگار کے مواقع فراہم ہوں گے۔ ترقی کی راہ میں حائل رکاوٹوں کا تذکرہ کرتے ہوئے چیف منسٹر نے کہا کہ ان کی حکومت کا بنیادی مقصد زرعی شعبہ کو منافع بخش بنانا ہے، تاکہ کسان خوشحال زندگی گزار سکیں۔ انھوں نے کہا کہ 2 اکتوبر سے تمام شعبوں کو بلاوقفہ برقی فراہم کی جائے گی اور پوری ریاست کو پائپ لائن کے ذریعہ پکوان گیس سربراہ کی جائے گی۔ تلنگانہ کے ہم منصب کو مذاکرات کی دعوت دیتے ہوئے مسٹر نائیڈو نے کہا کہ حیدرآباد جو برانڈ امیج کے طورپر اُبھر رہا ہے، اسے برقرار رکھا جائے اور اس شہر کی ترقی ہر ایک کی ذمہ داری ہے۔ انھوں نے بتایا کہ متحدہ آندھرا پردیش کی ترقی کے لئے جس طرح تمام ضلع کے عوام نے اتحاد کا مظاہرہ کیا تھا، اسی طرح تلنگانہ اور آندھرا پردیش حکومتوں کو باہمی مسائل کی یکسوئی کے لئے آپس میں مل بیٹھنا چاہئے اور ہمیں عوام کے درمیان نفرت نہیں پھیلانا چاہئے۔ انھوں نے کہا کہ اگر کسی مسئلہ پر دونوں ریاستوں میں اتفاق رائے نہ ہو تو دوسرے فورمس سے استفادہ کیا جاسکتا ہے۔ چیف منسٹر نے آندھرا پردیش کی تقسیم کے طریقہ کار پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ انھیں شدید دلی تکلیف پہنچی ہے۔ انھوں نے ریاست کی ترقی کے لئے عوام سے تعاون کی اپیل کی۔ مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے ضلع کرنول کے لئے مختلف ترقیاتی اسکیمات کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ایک وسیع تر علاقہ میں صنعتوں کا قیام، طیرانگاہوں کی تعمیر، انجینئرنگ تعلیمی اداروں کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔ انھوں نے بتایا کہ کرنول کو مرکزی حکومت کے تعاون سے ترقی یافتہ شہر بنایا جائے گا۔ قبل ازیں مسٹر نائیڈو نے قومی پرچم لہرایا اور پولیس پریڈ کی سلامی لی۔

TOPPOPULARRECENT