Wednesday , June 20 2018
Home / شہر کی خبریں / دونوں ریاستوں کے عازمین حج کی مشترکہ روانگی اور واپسی

دونوں ریاستوں کے عازمین حج کی مشترکہ روانگی اور واپسی

حج کمیٹی کی تقسیم فی الحال ملتوی ،علحدہ شیڈول کی تیاری

حج کمیٹی کی تقسیم فی الحال ملتوی ،علحدہ شیڈول کی تیاری
حیدرآباد۔/26اگسٹ،( سیاست نیوز) مرکزی حج کمیٹی نے حج سیزن 2014 کے حیدرآباد سے روانہ ہونے والے دو ریاستوں کے عازمین حج کیلئے علحدہ علحدہ شیڈول تیار کرنے سے اتفاق کرلیا ہے۔ ریاستی حج کمیٹی نے مرکزی کمیٹی سے درخواست کی تھی کہ تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے عازمین حج کیلئے روانگی اور واپسی سے متعلق علحدہ شیڈول تیار کیا جائے تاکہ دونوں ریاستوں کے عازمین کی ایک ساتھ روانگی میں سہولت ہو۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر سنٹرل حج کمیٹی عطاء الرحمن نے اس سلسلہ میں اسپیشل آفیسر ریاستی حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور کو اطلاع دی کہ وہ دونوں ریاستوں کے عازمین کیلئے علحدہ علحدہ شیڈول کی تیاری میں مصروف ہیں اور بہت جلد یہ کام مکمل کرلیا جائے گا۔ متحدہ آندھرا پردیش کی تقسیم کے باوجود حج کمیٹی سے دونوں ریاستوں کے عازمین حج ایک ساتھ روانہ ہورہے ہیں چونکہ تقسیم سے قبل ہی عازمین سے درخواستیں طلب کرلی گئی تھیں لہذا قرعہ اندازی میں متحدہ ریاست کے مطابق عازمین کا انتخاب کیا گیا اور روانگی و واپسی کا شیڈول بھی مشترکہ ریاست کے اعتبار سے تیار کیا گیا تھا۔ دونوں ریاستوں کے عازمین حج کی ایک ساتھ روانگی اور مکہ اور مدینہ میں ایک ہی ساتھ قیام کی سہولت فراہم کرنے کیلئے اسپیشل آفیسر پروفیسر ایس اے شکور نے تجویز پیش کی کہ دونوں ریاستوں کیلئے علحدہ شیڈول تیار کیا جائے۔ اس طرح عازمین اور ان کے رشتہ داروں کو بھی حیدرآباد آمد میں سہولت ہوگی۔ عام طور پر عازمین کو وداع کرنے کیلئے سیاسی قائدین موجود رہتے ہیں لہذا علحدہ شیڈول کی تیاری سے دونوں ریاستوں کے قائدین کو اپنی ریاست کے عازمین کو وداع کرنے میں بھی سہولت ہوگی۔ اسی دوران تلنگانہ میں حج کمیٹی کی تشکیل میں تاخیر ہوسکتی ہے اور حج سیزن کے اختتام تک حج کمیٹی کی تشکیل کا امکان نہیں ہے حالانکہ حکومت نے حج کمیٹی کی تقسیم کا عمل مکمل کرلیا ہے۔ آندھرا پردیش سے تعلق رکھنے والے مسلم ارکان اسمبلی نے چیف سکریٹری تلنگانہ سے ملاقات کرتے ہوئے خواہش کی کہ تلنگانہ حج کمیٹی کی تشکیل کی صورت میں کمیٹی میں آندھرا پردیش سے تعلق رکھنے والے افراد کو نمائندگی دی جائے۔ چونکہ حج کمیٹی سے تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے عازمین ایک ساتھ روانہ ہورہے ہیں لہذا آندھرا کے ارکان اسمبلی چاہتے ہیں کہ ان کی ریاست کو بھی تلنگانہ کی کمیٹی میں نمائندگی دی جائے۔ یہ فائیل حکومت نے محکمہ اقلیتی بہبود کو روانہ کردی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ تلنگانہ حکومت آندھرائی ارکان کی اس تجویز سے اتفاق نہیں رکھتی کیونکہ حج کمیٹی کی تقسیم کے بعد دونوں ریاستوں کو علحدہ کمیٹیوں کی تشکیل کا اختیار حاصل ہے۔ آندھرا پردیش کی حکومت اگر چاہے تو وہ فوری طور پر اپنی کمیٹی تشکیل دینے کیلئے آزاد ہے۔

TOPPOPULARRECENT