Sunday , January 21 2018
Home / شہر کی خبریں / دونوں شہروں میں مچھروں کی کثرت سے امراض میں اضافہ

دونوں شہروں میں مچھروں کی کثرت سے امراض میں اضافہ

ڈینگو کے باعث اموات ، بلدیہ کے شکایتی سیل پر عوام کی عرضی بے اثر

ڈینگو کے باعث اموات ، بلدیہ کے شکایتی سیل پر عوام کی عرضی بے اثر
حیدرآباد۔ 18؍نومبر (سیاست نیوز)۔ دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد میں مچھروں کی بہتات کے سبب وبائی امراض تیزی سے پھیل رہے ہیں۔ پرانے شہر کے علاقہ عیدی بازار کے رضانگر میں گزشتہ دو یوم کے دوران ہوئی دو اموات کے متعلق مقامی عوام کا ادعا ہے کہ یہ اموات ڈینگو کے سبب ہوئی ہیں اور علاقہ میں مچھروں کی بہتات کو روکنے کے لئے اقدامات کی متعدد مرتبہ درخواستوں کے باوجود کوئی کارروائی نہ ہونے کے سبب یہ صورتِ حال پیدا ہوئی ہے۔ مقامی عوام کے بموجب دو یوم قبل ایک 40 سالہ نوجوان کی موت واقع ہوئی جب کہ گزشتہ یوم 20 سالہ طالبہ کی موت واقع ہوئی ہے۔ رضانگر میں موجود کھلے نالے کے سبب مچھروں کی کثرت ہوا کرتی ہے اور مچھر کے کاٹنے سے کئی وبائی امراض بالخصوص ڈینگو، ملیریا اور دیگر امراض پھیلتے ہیں۔ بسا اوقات ڈینگو اور ملیریا بھی جان لیوا ثابت ہوتے ہیں۔ مقامی عوام کا کہنا ہے کہ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے 24 گھنٹے شکایتی سیل کے نمبر پر متعدد مرتبہ شکایت درج کروانے کے باوجود کوئی کارروائی نہیں کی گئی بلکہ مچھرکش ادویات کے چھڑکاؤ کی بھی زحمت بلدی عہدیداروں نے نہیں اُٹھائی۔ بتایا جاتا ہے کہ علاقہ میں بدبو و تعفن، گندگی کے علاوہ کچرے کی نکاسی کے نامناسب اقدامات کے سبب یہ صورتِ حال پیدا ہورہی ہے۔ مقامی عوام نے مطالبہ کیا کہ حکومت بالخصوص مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے عہدیداروں کو چاہئے کہ وہ فوری طور پر علاقہ کا دورہ کرتے ہوئے مچھروں کے خاتمہ کے لئے مؤثر اقدامات کریں۔ عیدی بازار ہی نہیں بلکہ پرانے شہر کے کئی علاقوں میں مچھروں کی کثرت سے عوام عاجز آچکے ہیں، لیکن اس کے باوجود بلدی عملہ مستعدی کا مظاہرہ نہیں کررہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT