Thursday , January 18 2018
Home / اضلاع کی خبریں / دوپہر کے کھانے کی اسکیم میں بدعنوانیاں

دوپہر کے کھانے کی اسکیم میں بدعنوانیاں

بیدر /3 جون ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ریاستی حکومت کی جانب سے سرکاری اور امدادی مدارس میں بچوں کیلئے شروع کردہ دوپہر کے کھانے کی اسکیم میں ضلع بیدر میں بڑے پیمانے پر بدعنوانیوں کی شکایت موصول ہوئی ہیں ۔ ضلع میں اوقع سرکاری مدارس میں طلباء کی تعداد بالکل نہ ہونے کے برابر ہے ۔ کئی مدارس ایسے ہیں جہاں طلباء کی تعداد کم ہے اور غیر ضروری طور پر

بیدر /3 جون ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ریاستی حکومت کی جانب سے سرکاری اور امدادی مدارس میں بچوں کیلئے شروع کردہ دوپہر کے کھانے کی اسکیم میں ضلع بیدر میں بڑے پیمانے پر بدعنوانیوں کی شکایت موصول ہوئی ہیں ۔ ضلع میں اوقع سرکاری مدارس میں طلباء کی تعداد بالکل نہ ہونے کے برابر ہے ۔ کئی مدارس ایسے ہیں جہاں طلباء کی تعداد کم ہے اور غیر ضروری طور پر زائد ٹیچرس ہیں ۔ کئی مدارس میں اڈمیشن رجسٹرڈ میں فرضی ناموں کو درج کرکے طلباء کی تعداد میں اضافہ ظاہر کیا جارہا ہے ۔ دوپہر کے کھانے کی اسکیم کے تحت اناج ، تیل ، پکوان ، گیس سلینڈرس اور دیگر اشیاء بھاری مقدار میں الاٹ کرواکر اس میں خرد برد کیا جارہا ہے ۔ مدارس کے ذمہ داروں اور محکمہ تعلیمات کے ذمہ دار عہدیداروں کی ملی بھگت سے سرکاری مدارس میں بڑے پیمانے پر بدعنوانیاں چل رہی ہیں ۔ اس طرح سرکاری مدارس میں تعلیمی نظام ناقص ہو رہا ہے ۔ حکومت کی جانب سے ان مدارس کو ہر سہولیات فراہم ہیں ۔ اس کے باوجود بھی ٹیچرس کی لاپرواہی اور ناقص تعلیمی نظام کے سبب لوگ اپنے بچوں کو سرکاری مدارس میں شریک کروانے کے بجائے بھاری فیس ادا کرکے خانگی مدارس میں داخل کروانے کو ترجیح دے رہے ہیں کیونکہ سرکاری مدارس میں اپنے بچوں کو داخل کرکے ان کا مستقبل تاریک کرنا نہیں چاہتے ۔ عوام میں پیدا اس رحجان کو ختم کرنا ہوتو تمام سرکاری مدارس کا دورہ کرکے تفصیلی جائزہ لیا جائے اور سرکاری مدارس میں تعلیمی معیار کو بہتر بنانے کیلئے سخت اقدامات کئے جائیں ۔

TOPPOPULARRECENT