Friday , June 22 2018
Home / دنیا / دو تہائی آسٹریلیائی نائب وزیر اعظم کے استعفیٰ کے حق میں

دو تہائی آسٹریلیائی نائب وزیر اعظم کے استعفیٰ کے حق میں

سڈنی، 19 فروری (یواین آئی) اپنی سابق پریس سیکرٹری کے ساتھ شادی کے بعد تعلقات کے معاملہ میں تنقید کا سامنا کر رہے آسٹریلیا کے نائب وزیر اعظم برنابي جوائس کے معاملہ میں دو تہائی سے زیادہ آسٹریلیائی عوام چاہتے ہیں کہ انہیں اپنے عہدہ سے استعفیٰ دے دینا چاہئے ۔ان کے اس ’’عمل‘‘سے حکومت پر کافی دباؤ بڑھ رہا ہے کہ انہیں ہٹانے میں آخر اتنی تاخیر کیوں کی جا رہی ہے ۔کیتھولک فرقہ سے تعلق رکھنے والے مسٹر جوائس نے انتخابات میں خاندانی اقدار کو بچانے کے لئے جم کر پرچار کیا تھا اور اب اپنی سابق پریس سیکرٹری سے جنسی تعلقات کی باتوں کا انکشاف ہونے کے بعد انھوں نے اپنے عہدہ سے استعفیٰ دینے سے انکار کر دیا اور یہ بھی کہا کہ وہ باپ بننے والے ہیں۔تاہم یہ بات الگ ہے کہ 24 سال پہلے ان کی شادی ہو گئی تھی۔دیہی علاقوں میں عوامی حمایت رکھنے والی نیشنل پارٹی کے رہنما جوائس کے جنسی معاملہ کو لے کر 65 فیصد ووٹروں کی رائے ہے کہ انہیں اپنے عہدہ سے استعفیٰ دے دینا چاہئے ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق جنسی اسکنڈل کے سامنے آنے کے بعد حکومت کی شبیہ کافی خراب ہو گئی ہے اور وزیر اعظم میلکم ٹرنبل کو ہر جگہ اپنا دفاع کرنا پڑ رہا ہے کیونکہ ان کی لبرل پارٹی کا مسٹر جوائس کی پارٹی سے اتحاد ہے ۔مسٹر ٹرنبل نے آج ملبورن میں ایک ریڈیو پروگرام میں کہا کہ ان کے اور مسٹر جوائس کے درمیان اسی مسئلہ پر ہفتہ کو کافی دیر تک بات چیت ہوئی اور اس میں دونوں کے درمیان جن ایشوزپر کشیدگی تھی انہیں بڑی حد تک سلجھا لیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT