Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / دھرنا چوک مسئلہ اپوزیشن پر نچلی سیاست کرنے کا الزام

دھرنا چوک مسئلہ اپوزیشن پر نچلی سیاست کرنے کا الزام

شرپسندوں کے ذریعہ غنڈہ گردی ، حکمراں پارٹی کے قائدین کا ردعمل
حیدرآباد ۔ 16 ۔ مئی (سیاست نیوز) ریاست میں اپوزیشن جماعتوں کے رویہ پر ٹی آر ایس لیجسلیچر پارٹی مختلف کارپوریشنوں کے صدور نشین نے شدید تنقید کی ہے ۔ انہوں نے کل دھرنا چوک پر پیش آئے واقعات کا حوالہ دیتے ہوئے اپوزیشن کو ذمہ دار قرار دیا اور کانگریس ، تلگو دیشم ، سی پی آئی ، سی پی ایم اور بی جے پی قائدین اس مسئلہ پر نچلی سیاست کر رہے ہیں۔ تلنگانہ اگروز انڈسٹریز کے صدرنشین ایل کشن راؤ، رکن قانون ساز کونسل ایم سرینواس ریڈی ، ایم بی سی کے صدرنشین ٹی سرینواس اور دوسروں نے آج تلنگانہ بھون میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ دھرنا چوک کی بحالی کے نام پر اپوزیشن میں غنڈہ گردی کا مظاہرہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ شرپسندوں نے مقامی افراد پر حملہ کیا جو دھرنا چوک کی منتقلی کا مطالبہ کر رہے تھے ۔ تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی پر تنقید کرتے ہوئے ان قائدین نے کہا کہ جے اے سی کی تشکیل کا مقصد تلنگانہ کا حصول تھا۔ اب جبکہ نئی ریاست تلنگانہ قائم ہوچکی ہے اور ٹی آر ایس کی قیادت میں ناانصافیوں کا خاتمہ قریب ہے، لہذا جے اے سی کا وجود بے معنیٰ ہے۔ انہوں نے کہا کہ جے اے سی آخر کس مقصد کے لئے کام کر رہی ہے۔ اس بارے میں عوام خود الجھن کا شکار ہیں۔ اپوزیشن جماعتوں کو مضبوط کرنے کیلئے جے اے سی کے صدرنشین کودنڈا رام حکومت کے خلاف مہم چلا رہے ہیں۔ ان قائدین نے الزام عائد کیا کہ اپوزیشن جماعتوں کو تلنگانہ میں حکومت پر تنقید کیلئے کوئی موقع میسر نہیں ہے ۔ لہذا وہ دھرنا چوک کے نام پر سیاسی مقصد براری کے خواہاں ہیں۔ پروفیسر کودنڈا رام اپوزیشن جماعتوں کے ایجنٹ کی طرح کام کر رہے ہیں جبکہ ٹی آر ایس حکومت نے عوام کی بھلائی کیلئے خود کو وقف کردیا ہے ۔ سماج کے تمام طبقات حکومت کی کارکردگی سے مطمئن ہیں اور اپوزیشن کے بہکاوے میں آنے والے نہیں۔ گزشتہ تین برسوں میں سنہرے تلنگانہ کی تشکیل کی سمت حکومت نے کئی اقدامات کئے ۔ لہذا اپوزیشن کے پاس کوئی موضوع باقی نہیں رہا۔ ٹی آر ایس قائدین نے اپوزیشن سے سوال کیا کہ آیا حکومت کی جانب سے دھرنا چوک کی برخواستگی کے سلسلہ میں کوئی احکامات جاری کئے گئے؟ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے ابھی تک اس سلسلہ میں کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے اور مقامی افراد منتقلی کی مانگ کر رہے ہیں اور یہ معاملہ عدالت میں زیر دوران ہے۔ انہوں نے کہا کہ تلگو دیشم حکومت نے دھرنا چوک کو لمبنی پارک سے اندرا پارک منتقل کردیا تھا۔ اس وقت اپوزیشن جماعتیں خاموش رہیں۔ ٹی آر ایس قائدین نے بی جے پی قائدین کو مشورہ دیا کہ وہ حکومت پر تنقید سے قبل وزیراعظم کے ایک بیان کا مطالعہ کریں جس میں انہوں نے تلنگانہ حکومت کی ستائش کی تھی۔ تلنگانہ ریاست کی ترقی اور چیف منسٹر کی نریندر مودی نے ستائش کی لیکن آج بی جے پی قائدین اپنے سیاسی مفادات کیلئے حکومت پر الزام تراشی کر رہے ہیں۔ ان قائدین نے کہا کہ دھرنا چوک کے نام پر کودنڈا رام اور ان کی تائیدی جماعتوں کا کھیل زیادہ دن نہیں چلے گا اور عوام انہیں سبق سکھائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT