Wednesday , November 14 2018
Home / کھیل کی خبریں / دھونی اور کارتک کی قیادت میں آج دلچسپ مقابلہ متوقع

دھونی اور کارتک کی قیادت میں آج دلچسپ مقابلہ متوقع

چینائی۔9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ہندستان کے دو وکٹ کیپر مہندر سنگھ دھونی اور دنیش کارتک کی ٹیموں چینائی سوپر کنگز اور کولکتہ نائٹ رائڈرس کے درمیان آئی پی ایل 11 کے منگل کو ہونے والے میچ میں دلچسپ مقابلہ متوقعہے ۔دو سال کی معطلی کے بعد آئی پی ایل میں واپس آنے والی سوپر گنکس کی ٹیم نے 11 ویں سیزن میں دفاعی چمپئن ممبئی انڈینس کو ڈیون براوو کی کرشماتی نصف سنچری سے شکست دے کر فاتحانہ واپسی کی جبکہ نئے کپتان کے ساتھ کھیل رہی کولکتہ کی ٹیم نے اپنے گھریلو میدان ایڈن گارڈن میں گزشتہ رات رائل چیلنجرز بنگلور کو سنیل نارائن کے طوفانی بیٹنگ سے آسانی سے شکست دی۔دھونی کی سوپر کنگس اور کارتک کی کولکتہ ٹیم نے اس سیزن میں فاتحانہ آغاز کر لیا ہے اور دونوں ٹیمیں اپنے دوسرے میچ میں جیت کی تال برقرار رکھنے کیلئے اپنا پورا زور لگا دیں گی۔یہ مقابلہ ہندوستانی کرکٹ کے دو وکٹ کیپروں اور آئی پی ایل کپتانوں کا بھی مقابلہ رہے گا ۔سوپر کنگس کو پہلے میچ میں ممبئی کے خلاف ایک وکٹ سے فتح حاصل کرنے کے لئے سخت جدوجہد کرنی پڑی۔یہ تو بھلا ہو ٹیم کے کیریبین کھلاڑی ڈیون براوو کا جنہوں نے 30 گیندوں میں سات چھکے لگاتے ہوئے 68 رن بنا کر ٹیم کو ایک گیند قبل ناقابل یقین جیت دلا دی۔جب تک سوپر کنگس ٹیم میچ جیتی نہیں تھی اس وقت تک کیپٹن کول دھونی ڈریسنگ روم میں مسلسل چکر لگا رہے تھے ۔آخری اوور میں کیدار جادھو کے چوتھی اور پانچویں گیندوں پر چھکا اور چوکا مارنے کے بعد دھونی اور انکے ساتھیوں نے راحت کی سانس لی تھی۔سوپر کنگس کو اگلے میچ میں اگر یہ تال برقرار رکھنی ہے تو اس کے ٹاپ آرڈر میں شین واٹسن، امباٹي رائیڈو، سریش رائنا، دھونی اور رویندر جڈیجہ کو بہتر مظاہرہ کرنا پڑے گا۔سوپر کنگس کے بولروں کو ساتھ ہی سنیل نارائن کی بیٹنگ کو بھی قابو کرنا ہوگا۔ نارائن نے گزشتہ آئی پی ایل میں اوپننگ میں اترکر بہت حیرت انگیز اننگز کھیلی تھی ۔اسپنر کا کردار ادا کرنے والے نارائن کو اوپننگ بھی خاصی راس آ رہی ہے اور بنگلور کے خلاف انہوں نے محض 19 گیندوں میں پانچ چھکوں کے ساتھ 50 رنزاسکور کئے ۔براوو اور نارائن دونوں ہی پہلے میچوں میں مین آف دی میچ رہے تھے ۔دھونی محدود اوورمیں ہندستانی ٹیم کے وکٹ کیپر ہیں جبکہ ان کی غیر حاضری میں ندھاس ٹرافی میں ہندستان کے لیے فاتح چھکا مارنے والے کارتک کو ان کا جانشین سمجھا جا رہا ہے ۔یہ مقابلہ دونوں ٹیموں کے ساتھ ساتھ ہندستانی ٹیم کے ان دو وکٹ کیپروں کی کپتانی کے مؤثر طریقے کا بھی مقابلہ رہے گا۔

TOPPOPULARRECENT