Tuesday , December 12 2017
Home / دنیا / دہشت گردی سے مسلمان زیادہ متاثر : مون

دہشت گردی سے مسلمان زیادہ متاثر : مون

جنیوا ۔ 8 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سکریٹری جنرل اقوام متحدہ بان کی مون نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہاکہ عالمی سطح پر آج جس پرتشدد انتہاء پسندی یا دہشت گردی کا مظاہرہ کیا جارہا ہے اس سے متاثر ہونے والوں کی اکثریت مسلمانوں کی ہے۔ انہوں نے یہ اعلان بھی کیا کہ دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے اقوام متحدہ بھی ایک وسیع تر مزاحمتی گروپ تشکیل د ے گا جو دہشت گردوں سے نمٹے گا۔ جنیوا میں ایک کانفرنس سے خطاب کے دوران انہوں نے کہا کہ یہ بات اپنی جگہ بالکل درست ہے کہ جب دہشت گردی کی بات کی جاتی ہے تو ہم داعش یا بوکوحرام کا تذکرہ کرتے ہیں تاہم یہ بات میں ابتداء سے ہی واضح کردینا چاہتا ہوں کہ دہشت گردی کی جڑیں کسی مذہب، خطہ، قومیت یا نسلی گروپ سے نہیںہے اور یہ بات بھی اپنی جگہ مسلمہ ہے کہ دہشت گردی سے اگر کوئی قوم سب سے زیادہ متاثر ہے تو وہ مسلمان۔ لاکھوں افراد اپنے آبائی مکانات چھوڑ کر فرار ہورہے ہیں۔ ان کو اپنے ملک اور اپنے آبائی مکانات چھوڑنے کا جذباتی طور پر جتنا دکھ ہوتا ہوگا اس کا اندازہ ہم یہاں بیٹھے بیٹھے نہیں کرسکتے۔ سب سے زیادہ فکرمندی کی بات یہ ہیکہ انتہاء پسندوں کے ذریعہ کیمیکل، ریڈیالوجیکل، بائیولوجیکل اور یہاں تک کہ نیوکلیئر میٹریئل بھی حاصل کیا جاسکتا ہے جو سب سے زیادہ نقصان ثابت ہوسکتا ہے اور اقوام متحدہ اسی بات پر غوروخوض کررہا ہیکہ اس خطرہ کو کس طرح ٹالا جائے۔ بان کی مون نے 32 ممالک کے مختلف وزراء کے ساتھ جمعہ کے روز پرتشدد انتہاء پسندی کی روک تھام کیلئے منعقدہ ایک اعلیٰ سطحی کانفرنس میں شرکت کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT