Wednesday , December 19 2018

دہشت گردی سے نمٹنے دوہرے معیارات پر تنقید

اولان بیتور ۔ /17 مئی (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان اور منگولیا نے دہشت گردی سے نمٹنے کے معاملات میں بین الاقوامی برادری کے دوہرے معیارات اور جانبداری کی سخت مخالفت کی اور توقع ظاہر کی کہ دہشت گردوں کے تمام محفوظ ٹھکانوں اور پناہ گاہوں کا کسی تاخیر کے بغیر صفایا کردیا جائے گا ۔ نریندر مودی نے جو منگولیا کا دورہ کرنے والے پہلے ہندوستانی وز

اولان بیتور ۔ /17 مئی (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان اور منگولیا نے دہشت گردی سے نمٹنے کے معاملات میں بین الاقوامی برادری کے دوہرے معیارات اور جانبداری کی سخت مخالفت کی اور توقع ظاہر کی کہ دہشت گردوں کے تمام محفوظ ٹھکانوں اور پناہ گاہوں کا کسی تاخیر کے بغیر صفایا کردیا جائے گا ۔ نریندر مودی نے جو منگولیا کا دورہ کرنے والے پہلے ہندوستانی وزیراعظم ہیں اپنے میزبان ملک کے ہم منصب چمڈ سائیکھان بیلج کے ساتھ سرکاری محل میں وسیع تر تبادلہ خیال کیا اور باہمی تعلقات کو ایک نئی سطح پر پہونچانے کا عہد کیا ۔

جس کے بعد دونوں وزرائے اعظم کی دستخط سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا کہا گیا کہ ’’دونوں وزرائے اعظم نے کہا کہ حالیہ عرصہ کے دوران پھیلنے والی بین الاقوامی دہشت گردی اور اس کی نوعیت سے ساری انسانیت کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے ۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ اس سے نمٹنے کیلئے عالمی عزم و اتحاد کا مظاہرہ کیا جائے اور کسی جانبداری یا دوہرے معیارات کے بغیر ساری بین الاقوامی برادری کی طرف سے مشترکہ اقدامات کئے جائیں ‘‘ ۔ بیان میں مزید کہا گیا کہ ’’وزرائے اعظم نے توقع ظاہر کی کہ دہشت گردوں کے تمام محفوظ ٹھکانوں اور پناہ گاہوں کو کسی تاخیر کے بغیر ختم کردیا جائے ‘‘ دونوں ملکوں نے سرحدی نگرانی ، سائبر سیکورٹی ، توانائی کی تجدید کے بشمول مختلف شعبوں میں تعاون کے لئے 13 سمجھوتوں پر دستخط کئے ۔
مودی کو ریس کا گھوڑا بطور تحفہ پیش کیا گیا
وزیراعظم نریندر مودی کو منگولیا کے ہم منصب چمڈ سائیکھان بیلج نے ریس کا گھوڑا بطور تحفہ پیش کیا ۔ اس گھوڑے کا نام ’’کنتھکا‘‘ ہے اور وہاں کے اسپورٹس فیسٹول میں انہیں یہ تحفہ پیش کیا گیا ۔ بعد ازاں مودی نے ٹوئٹر پر لکھا کہ ایک خصوصی مہمان کو ایک خصوصی تحفہ پیش کیا گیا ہے ۔

منگول سارنگی پر طبع آزمائی
٭٭ وزیراعظم نریندر مودی نے اپنے تاریخی دورہ منگولیا کے موقع پر اس ملک میں موسیقی کے روایتی آلہ سارنگی پر طبع آزمائی کی میزبان ملک کے صدر سخر آغیائن البیگدروج نے اپنے مہمان ہندوستانی وزیراعظم مودی کو سارنگی کا تحفہ دیا تھا ۔ وزارت امور خارجہ میں ایک ترجمان وکاس سواروپ نے ٹوئٹر پر لکھا کہ نریندر مودی نے مورین کھوڑ کے تاروں پر طبع آزمائی کرتے ہوئے منگولیہ کے ساتھ تعلقات کے ساز کو ہم آہنگی کی ایک نئی آواز دی ہے ‘‘وکاس سواروپ نے مزید لکھا کہ ’’ جاپان میں انہوں (مودی) نے ڈرمس پر طبع آزمائی کی تھی ۔ منگولیا میں وزیراعظم نریندر مودی نے مورین کھور پر موسیقی کے تار بجائے ہیں ‘‘ ۔ اس موقع پر وزیراعظم مودی نے صدرالبیگ دورج کو منگولوں کی تاریخ پر مبنی مخطوطات ’ جامعہ التواریخ‘ کا نسخہ پیش کیا ۔ جس کو پہلی عالمی تاریخ بھی سمجھا جاتا ہے ۔ منگول شاہ غازان خان کے ایک وزیر رشید الدین فضل اللہ حمیدانی نے اولجینجو دور حکمرانی (1304-1316) کے دوران لکھا تھا ۔ اترپردیش کی رضا لائبریری کے ان مخطوطات میں 80 تصاویر بھی ہیں جو اس تاریخ کی پہلی جلد کا حصہ ہیں ۔ جنہیں 13 ویں صدی سے تعلق رکھتے ہیں ۔ ان نادر مخطوط کی انتہائی احتیاط و نزرک کے ساتھ دوبارہ تخلیق کی گئی تھی ۔ جلد اول کے اس حصہ کے سوا اس کو ماباقی حصوں کے وجود کے بارے میں کوئی علم نہیں ہے ۔ نریندر مودی منگولیا کا دورہ کرنے والے پہلے ہندوستانی وزیراعظم ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT