Tuesday , December 11 2018

دہشت گردی سے نمٹنے پاکستان میں خصوصی عدالتیں

اسلام آباد ۔ 25 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم پاکستان نواز شریف نے آج ایک اعلان کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے خصوصی عدالتیں قائم کی جائیں گی جس نے اب تک ملک میں 50,000 افراد کو موت کی نیند سلادیا۔ چہارشنبہ کی شب کو اپنی ایک ٹیلی ویژن تقریر میں انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتیں خصوصی عدالتوں کے قیام کیلئے رائے شماری کرتے ہوئے اتف

اسلام آباد ۔ 25 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم پاکستان نواز شریف نے آج ایک اعلان کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے خصوصی عدالتیں قائم کی جائیں گی جس نے اب تک ملک میں 50,000 افراد کو موت کی نیند سلادیا۔ چہارشنبہ کی شب کو اپنی ایک ٹیلی ویژن تقریر میں انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتیں خصوصی عدالتوں کے قیام کیلئے رائے شماری کرتے ہوئے اتفاق رائے سے اس نتیجہ پر پہنچی ہیں کہ دو سال کے عرصہ کیلئے خصوصی عدالتوں کا قیام عمل میں لایا جائے جہاں صرف دہشت گردی سے مربوط مقدمات کی سماعت کی جائے گی۔ دریں اثناء جیو نیوز بھی وزیراعظم نواز شریف کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کی حیثیت سے یہ ان کی ذمہ داری ہیکہ وہ دہشت گردی کے خلاف لڑائی کی قیادت کریں۔ اپنے سخت لہجہ والے پیغام میں انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کیلئے اب گنتی کے دن باقی رہ گئے ہیں اور دہشت گردوں کی مالی امداد کے تمام وسائل کو تباہ و برباد کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ مناسب رجسٹریشن کے بغیر مدرسوں کو چلانے کی اجازت بھی نہیں دی جائے گی۔ علاوہ ازیں ممنوعہ تنظیموں کو نئے ناموں کے ساتھ سرگرمیاں چلانے کی اجازت نہیں دی جائے گی اور اس بات کو بھی یقینی بنایا جائے گا کہ ان کو ملنے والی مالی امداد کے ذرائع بھی مسدود کردیئے جائیں۔ نواز شریف نے کہا کہ ٹی وی چینلز کو بھی دہشت گردوں کے کوریج کی اجازت نہیں دی جائے گی بلکہ سوشیل میڈیا سے بھی ان کے وجود کو مٹادیا جائے گا۔ منافرت پھیلانے والی تقاریر اور مواد کے خلاف بھی سخت کارروائی کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT