Tuesday , October 16 2018
Home / دنیا / دہشت گردی مالی معاونت: پاکستان کو ترکی، چین اور سعودی کا ساتھ

دہشت گردی مالی معاونت: پاکستان کو ترکی، چین اور سعودی کا ساتھ

تینوں ممالک نے ایف اے ٹی ایف فیصلہ پر امریکہ کیخلاف اتحاد کامظاہرہ کیا
واشنگٹن ۔ 22 فروری (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے ذریعہ پاکستان کو عالمی دہشت گردی مالی تعاون کی فہرست میں شامل کرنے کی کوشش کو پاکستان کے قریبی ممالک چین، سعودی عرب اور ترکی نے اپنے اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے ناکام کردیا۔ ترکی، چین اور سعودی عرب کے اس فیصلے کے بعد پاکستان نے اس ضمن میں اپنے فتح کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ آنے والے پریس میٹنگ میں فائینانشیل ایکشن ٹاسک فورس رپورٹ کے پیچھے سازش کررہا تھا اور یہ ثابت کرنے کی فراق میں تھا کہ پاکستان ایک ایسا ملک ہے جو دہشت گردوں کو مالی تعاون فراہم کرنے کی سرگرمی کو روکنے اور یو این سیکوریٹی کونسل کے ذریعہ منظور قراردادوں پر عمل آوری میں ناکام رہا ہے۔ وال اسٹریٹ جرنل کی رپورٹ کے مطابق سعودی عربیہ اور صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے درمیان اس معاملہ پر بہت ہی کم اختلاف تھا۔ وہیں سعودی عرب پر یہ بھی الزام عائد کیا جارہا ہے کہ وہ گلف کارپوریشن کونسل (جی سی سی) کے اشاروں پر کام کررہا ہے۔ واضح رہیکہ وال اسٹریٹ نے لکھا ہیکہ عرب، ترکی، چین کے اس معاملے پرپاکستان کے ساتھ ہونے کے باوجود امریکہ مستقل اس بات کا کوشاں ہیکہ ایف اے ٹی ایف اس پر فیصلہ کرے۔ وہیں پاکستان کا کہنا ہیکہ پیرس کی بین الاقوامی تنظیم ایف اے ٹی ایف کے ذریعہ اس معاملے کو تین مہینے کیلئے ملتوی کردینے کے بعد بھی امریکہ پاکستان کو دہشت گرد ممالک کی پشت پناہی کرنے والی فہرست میں شامل کرانے کی لگاتار کوشش کررہا ہے۔ معلوم ہو کہ ایف اے ٹی ایف ایک عالمی تنظیم ہے جو دہشت گردی کو مالی تعاون فراہم کرنے کے معاملے کو دیکھتی ہے۔ نیز اس کے ذریعہ ایسا پیرس میں پیش کی جانے والی رپورٹ کے حوالے سے امریکہ اور دوسرے یوروپین ممالک اس بات کے لئے کوشاں تھے کہ پاکستان کو بھی اس فہرست میں شامل کیا جائے کہ وہ بھی دہشت گردی کی مالی معاونت کرتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT