Saturday , November 25 2017
Home / دنیا / دہشت گردی کے مخبروں کا لائی ڈٹکٹرٹسٹ

دہشت گردی کے مخبروں کا لائی ڈٹکٹرٹسٹ

برطانیہ میں اسکاٹ لینڈ یارڈ کا اقدام ‘ سینئر عہدیدار کا پروگرام
لندن ۔9جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) اسکاٹ لینڈ یارڈ نے لائی ڈٹکٹرٹسٹ دہشت گردی کے مخبروں پر استعمال کرنا شروع کردیا ہے ‘ تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جاسکے کہ سراغ رسانی اطلاعات مستحکم ہوں ۔ میٹرو پولیٹن پولیس کے انسداد دہشت گردی کمان نے اعلیٰ سطحی خفیہ اسکیم کا آغاز کیا ہے تاکہ ان کے ذرائع پالی گراف امتحان کے ذریعہ جھوٹ اور غلط اطلاعات کی شناخت کرسکیں ۔ روزنامہ ’’ سنڈے ٹائمز ‘‘ کی خبر کے بموجب سمجھا جاتا ہے کہ یہ بے مثال پروگرام ان لوگوں پر نافذ کیا جائے گا جن کی وفاداری مشتبہ ہو اور جو مجرموں کی انڈرورلڈ میں سرگرم ہیں ۔ اسکاٹ لینڈ یارڈ نے کہاکہ ہم اس پر تبادلہ خیال کیلئے تیار نہیں ہیں ۔ اس اسکیم کی خبریں جس کی نگرانی مارٹ رولی کررہے ہیں اور جو ایک انتہائی سینئر مخالف دہشت گردی عہدیدار کی تخلیق ہے ۔ چار دہشت گرد حملوں کے پیش نظر اہمیت رکھتا ہے جو گذشتہ چار ماہ کے دوران برطانیہ میں کئے جاچکے ہیں ۔ جن میں 36 افراد ہلاک ہوئے تھے ۔ بعض لوگ ان حملوں کا ذمہ دار محکمہ سراغ رسانی کی ناکامی کو قرار دیتے ہیں حالانکہ M-15 اور پولیس کا کہنا ہے کہ ان کے پاس اسٹاف کی کمی ہے اور کام کا بوجھ زیادہ ہے ۔ پولیس کا کہناہے کہ دہشت گردی کے خطرہ میں دن بہ دن اضافہ ہوتا جارہا ہے ۔ عراق اور شام میں دولت اسلامیہ کے سرگرم ہونے کے بعد اس خطرہ میں روز افزوں اضافہ ہورہا ہے ۔ برطانیہ ۔ پاکستانی خرم بٹ کی زیرقیادت لندن پل پر گذشتہ ماہ حملے کی تحقیقات کررہا ہے ۔ یہاں پر پولیس کی جانب سے 24گھنٹے نگرانی رکھی جاتی تھی اور اس کے بعد ہی فیصلہ کیا گیا تھا کہ یہاں نگرانی کی اتنی ضرورت نہیں ہے جتنی کہ دیگر مقامات پر ہے ۔ برطانیہ کی وزیر اعظم تھریسامے نے برطانیہ کی صیانتی خدمات سے خواہش کی ہے کہ اپنے پروٹوکولس پر نظرثانی کرے کیونکہ M-15نے انتباہ دیا تھا کہ مانچسٹر کے علاقہ میں خودکش حملوں کا خطرہ ہے ۔ سلمان عابدی ایک خطرناک شخصیت ہیں اور وہ برطانیہ کے اہم مقامات کو خودکش دہشت گرد حملوں کا نشانہ بناسکتے ہیں ۔ چنانچہ لندن پُل سے نگرانی ختم کر کے دیگر مقامات پر منتقل کردی گئی تھی تاکہ پل کے حفاظتی انتظامات میں ضرورت پڑنے پر شدت پیدا کی جاسکے۔

TOPPOPULARRECENT