Monday , November 20 2017
Home / Top Stories / دہشت گرد تنظیموں کو آئی ایس آئی کی مالی و فوجی امدادکا انکشاف

دہشت گرد تنظیموں کو آئی ایس آئی کی مالی و فوجی امدادکا انکشاف

پاکستانی نژاد ڈیوڈ ہیڈلی کا خصوصی عدالت میں ویڈیو لنک کے ذریعہ بیان، ذکی الرحمن لکھوی ممبئی دہشت گرد حملوں کے ذمہ دار
ممبئی 9 فروری (سیاست ڈاٹ کام) دہشت گرد تنظیمیں لشکر طیبہ، جیش محمد اور حزب المجاہدین کو آئی ایس آئی سے مالی و فوجی امداد دی جارہی ہے۔ پاکستانی نژاد امریکی دہشت گرد ڈیوڈ کولمین ہیڈلی نے آج کہاکہ قبل ازیں ہندوستانی دفاعی سائنسدانوں کی چوٹی کانفرنس و سدھی ونائک مندر ممبئی پر حملہ کی سازش ناکام ہوچکی تھی۔ دوسرے دن بھی امریکہ سے ویڈیو رابطہ کے ذریعہ بیان دیتے ہوئے اُس نے کہاکہ وہ آئی ایس آئی کے علاوہ لشکر طیبہ کیلئے کام کررہا تھا۔ وہ چند آئی ایس آئی عہدیداروں کو جانتا ہے۔ بریگیڈیر ریاض لشکر طیبہ کے اعلیٰ سطحی کمانڈر ذکی الرحمن لکھوی کے ذریعہ تمام کارروائیاں کروارہے تھے ۔ ذکی الرحمن لکھوی کو ممبئی حملوں کا کلیدی سازشی سمجھا جاتا ہے۔ ہیڈلی نے خصوصی جج جی اے سنپ سے آج اپنے بیان میں پاکستانی فوج وآئی ایس آئی کے تین عہدیداروں کرنل شاہ، لیفٹننٹ کرنل حمزہ اور میجر سمیر علی کے علاوہ سبکدوش فوجی عہدیدار عبدالرحمن پاشاہ کے نام بتائے جو لشکر طیبہ اور القاعدہ کے ساتھ گہرے روابط کے ذریعہ کام کررہا ہے۔ ہیڈلی نے جو ممبئی کا 7 مرتبہ دورہ کرچکا ہے تاکہ اہداف کی نشاندہی کی جاسکے، انکشاف کیاکہ ممبئی پر حملہ کی سازش کا آغاز 26 نومبر 2008 سے ایک سال پہلے ہوا تھا۔ لشکر طیبہ ہندوستانی دفاعی سائنسدانوں کی چوٹی کانفرنس کو جو تاج ہوٹل میں منعقد ہوئی، نشانہ بنانا چاہتی ہے۔ اس کیلئے ہوٹل کا نمونہ تیار کیا گیا تھا لیکن سائنسدانوں پر حملہ کا منصوبہ دفاعی وجوہات کی بنا پر منسوخ کردیا گیا ‘ہتھیاروں اور ارکان عملہ کی اسمگلنگ اور تفصیلات کی عدم دستیابی کی وجہ سے اِس حملہ کی منصوبہ بندی ناممکن تھی۔ اُس نے کہاکہ اُس نے شہرہ آفاق سدھی ونائک مندر اور بحریہ کے فضائی اڈے پر حملہ کی سازش تیار کی تھی۔

 

اُس نے کہاکہ لشکر طیبہ گروپ بحیثیت مجموعی ہندوستان میں دہشت گرد حملوں کا ذمہ دار ہے اور اس بات کا قیاس کیا جاسکتا ہے کہ احکامات لکھوی جاری کرتے ہیں کیوں کہ وہ اعلیٰ سطحی کمانڈر ہیں۔ ڈیوڈ کولمین ہیڈلی نے عدالت سے کہاکہ اُسے پاکستان کی آئی ایس آئی نے ہندوستانی فوجیوں کو جاسوسی کیلئے بھرتی کا حکم دیا تھا۔ ممبئی پر حملہ کے منصوبوں کی تفصیلات کا انکشاف کرتے ہوئے اُس نے کہاکہ نومبر  ۔ ڈسمبر 2007  میں لشکر نے مقبوضہ کشمیر کے شہر مظفرآباد میں اجلاس منعقد کیا جس میں لشکر کے کارکنوں ساجد میر اور ابو کہفہ نے شرکت کی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ممبئی میں دہشت گرد حملے کئے جائیں۔ تاج محل ہوٹل پر حملہ کی ذمہ داری ہیڈلی کے سپرد کی گئی۔ ہیڈلی نے کہاکہ لشکر کارکن ساجد میر اور ابو کہفہ کو اطلاع ملی تھی کہ ہندوستانی دفاعی سائنسدانوں کی ایک چوٹی کانفرنس تاج ہوٹل ممبئی میں منعقد ہونے والی ہے، وہ چاہتا تھا کہ اِس موقع پر حملے کی منصوبہ بندی کی جائے۔ اُس نے تاج ہوٹل کا ایک نمونہ بھی تیار کرلیا تھا۔ لیکن دفاعی وجوہات کی بنا پر حملہ منسوخ کردیا گیا۔

سدھی ونائک مندر پر حملہ کے بارے میں ہیڈلی نے کہاکہ ساجد میر جو لشکر طیبہ میں اُسے احکام جاری کرنے کا ذمہ دار تھا، واضح طور پر اُس سے کہہ چکا تھا کہ ویڈیو فلم تیار کی جائے۔ نومبر 2007 سے پہلے ممبئی کے اہداف کا فیصلہ نہیں کیا گیا تھا۔ ہیڈلی نے کہاکہ وہ سبکدوش فوجی عہدیدار عبدالرحمن پاشاہ سے پاکستان میں 2003 کے اوائل میں لاہور کی ایک مسجد میں ملاقات کرچکا ہے۔ اُس وقت پاشاہ لشکر کے ساتھ تھا۔ اُسکے القاعدہ سے روابط نہیں تھے۔ دو سال بعد اُس نے لشکر طیبہ سے ترک تعلق کرکے القاعدہ میں شمولیت اختیار کی۔ آئی ایس آئی کے میجر اقبال سے ہیڈلی کی ملاقات 2006 کے اوائل میں لاہور میں ہوئی تھی۔ انھوں نے ہیڈلی کو
ہدایت دی تھی کہ ہندوستان کے فوجی محکمہ سراغ رسانی کے بارے میں معلومات حاصل کریں اور ہندوستانی فوج کے کسی عہدیدار کو پاکستان کیلئے جاسوسی پر آمادہ کرے۔ سمیر علی چاہتے تھے کہ ہیڈلی خود بھی ہندوستان میں جاسوسی کا کام کرے۔ اُس کے روابط سمیر علی ٹیلیفون پر تھے۔ جیش محمد کے بانی مسعود اظہر کے ساتھ اپنے تعلقات کے بارے میں اُس نے کہاکہ وہ اکٹوبر 2003 میں اُن سے ملاقات کرچکا ہے جبکہ لشکر طیبہ کا ایک اجتماع جاری تھا اور وہ اُس میں مہمان مقرر تھا۔
آزاد ‘واسنک کی کروناندھی سے ملاقات متوقع
نئی دہلی 9 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) سینئر کانگریس قائدین غلام نبی آزاد اور مکل واسنک امکان ہے کہ 13 فبروری کو ڈی ایم کے لیڈر ایم کروناندھی سے ملاقات کرینگے ۔ یہ اشارے ملے ہیں کہ دونوں جماعتیں مجوزہ اسمبلی انتخابات کیلئے مفاہمت کرنا چاہتی ہیں۔ ایک کانگریس لیڈر نے شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ آزاد اور واسنک 13 فبروری کو کرو ناندھی سے ملاقات کرینگے

TOPPOPULARRECENT