Sunday , December 17 2017
Home / Top Stories / دہشت گرد سے روابط ، احمد پٹیل اور وجئے روپانی کے درمیان لفظی جنگ

دہشت گرد سے روابط ، احمد پٹیل اور وجئے روپانی کے درمیان لفظی جنگ

قاسم اسٹمبر والا کو ملازمت کس نے دلائی تھی ، چیف منسٹر گجرات کا سوال ، پرامن گجراتیوں کو تقسیم نہ کیا جائے ، احمد پٹیل کا ریمارک

نئی دہلی ۔ /28 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) گجرات میں اسمبلی انتخابات کی مہم کے باضابطہ آغاز سے قبل ہی ریاستی چیف منسٹر وجئے روپانی اور کانگریس کے سینئر لیڈر احمد پٹیل کے مابین بحث چھڑگئی جب روپانی نے الزام عائد کیا کہ کانگریس ورکنگ کمیٹی (سی ڈبلیو سی) کے رکن (احمد پٹیل) کے اس مشتبہ دہشت گرد سے امکانی روابط تھے جس کو چند دن قبل بھروچ سے گرفتار کیا گیا تھا ۔ احمد پٹیل جو راجیہ سبھا کے رکن سبھا اور کانگریس کی صدر سونیا گاندھی سے قربت کے لئے جانے جاتے ہیں ۔ پہلے ہی یہ کہتے ہوئے ان الزامات کو مسترد کرچکے ہیں کہ ’’ قومی سلامتی کے مسائل پر سیاست بازی نہیں کرنا چاہئیے ‘‘ ۔ احمد پٹیل نے جمعہ کو رات دیر گئے ٹوئیٹر پر لکھا تھا کہ ’’ہم درخواست کرتے ہیںکہ محض انتخابات کو ذہن میں رکھتے ہوئے قومی سلامتی کے مسائل پر سیاسی بازی گری نہ کی جائے ‘‘ ۔ اس ٹوئیٹ سے قبل وجئے روپانی نے احمد پٹیل سے راجیہ سبھا کی رکنیت سے استعفی دینے کا مطالبہ کیا تھا ۔ چیف منسٹر روپانی نے کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی سے بھی اس مسئلہ پر وضاحت کرنے کا مطالبہ کیا تھا ۔ چیف منسٹر دراصل محمد قاسم اسٹمبر والا کا حوالہ دے رہے تھے جو گجرات کے انسداد دہشت گردی اسکواڈ کی طرف سے چہارشنبہ کو گرفتار شدہ آئی ایس کے دو مبینہ کارکنوں میں شامل ہے ۔ احمد پٹیل نے سلسلہ وار ٹوئیٹس کرتے ہوئے لکھا کہ ’’دہشت گردی کے خلاف لڑائی کے درمیان پرامن گجراتیوں کو تقسیم نہ کیا جائے ‘‘ ۔ پٹیل نے مزید کہا کہ ’’ بی جے پی کی طرف سے عائد کردہ الزامات بالکل بے بنیاد ہیں ۔

انہوں نے ایک اور ٹوئیٹ میں لکھا کہ ’’ان دو مشتبہ دہشت گردوں کی گرفتاری پر میں اور میری پارٹی اے ٹی ایس کی ستائش کرتی ہے ۔ میں ان کے خلاف تیز رفتار اور سخت کارروائی کا مطالبہ کرتا ہوں ‘‘ ۔ محمد قاسم اسٹمبر والا چند دن قبل ہی انکلیشور کے سردار پٹیل ہاسپٹل اور امراض قلب کے انسٹی ٹیوٹ میں کارڈیوگرام ٹیکنیشین کے عہدہ سے استعفی دیدیا تھا ۔ احمد آباد سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق احمد پٹیل نے سردار پٹیل ہاسپٹل کو عصری بنانے میں مدد کی تھی ۔ وہ اس ہاسپٹل کے ابتدائی برسوں سے ٹرسٹی رہے ہیں لیکن 2014 ء میں انہوں نے ٹرسٹی کے عہدہ سے استعفی دیدیا تھا ۔ گجرات کے انسداد دہشت گردی اسکواڈ (اے ٹی ایس) نے حال ہی میں اسٹمبر والا اور یو احمد مرزا کو گرفتار کیا تھا اور الزام عائد کیا تھا کہ یہ دونوں آئی ایس کارندے احمد آباد کے علاقہ میں ایک یہودی عبادت گاہ پر حملے کا منصوبہ بنارہے تھے ۔ عبید احمد مرزا پیشہ سے وکیل ہے ۔ احمد پٹیل سے روابط کا تذکرہ کرتے ہوئے چیف منسٹر روپانی یہ جانناچاہتے تھے کہ ’’اس (اسٹمبر والا) کو ملازمت کس نے دلائی تھی ؟ ۔ آیا وہ (احمد پٹیل) اس کی سرگرمیوں سے باخبر تھے ؟ ‘‘ ۔ روپانی نے کہا کہ ’’یہ سوال اس لئے پیدا ہوا ہے کہ دہشت گرد (محمد قاسم اسٹمبر والا) اپنی گرفتاری سے دو دن قبل ہی ملازمت سے استعفی دیا تھا یا پھر اس کو نکال دیا گیا تھا ‘‘ ۔

TOPPOPULARRECENT