Wednesday , December 19 2018

دہلی اجتماعی عصمت ریزی پر تیارشدہ دستاویزی فلم کی امریکہ میں نمائش

نیویارک ۔ 10 مارچ۔(سیاست ڈاٹ کام) نئی دہلی میں ڈسمبر 2012 ء میں نربھئے کی اجتماعی عصمت ریزی اور قتل کے رونگٹے کھڑے کرنے والے واقعہ پر مبنی دستاویزی فلم کا امریکہ میں پریمیئر شو رکھا گیا ۔ عوامی برہمی کے بعد ہندوستان میں اس دستاویزی فلم کی نمائش پر امتناع عائد کیا گیا ہے ۔ آسکر ایوارڈ یافتہ اداکارہ میریل اسٹریپ، فریدہ پنٹو اور ہندوستان

نیویارک ۔ 10 مارچ۔(سیاست ڈاٹ کام) نئی دہلی میں ڈسمبر 2012 ء میں نربھئے کی اجتماعی عصمت ریزی اور قتل کے رونگٹے کھڑے کرنے والے واقعہ پر مبنی دستاویزی فلم کا امریکہ میں پریمیئر شو رکھا گیا ۔ عوامی برہمی کے بعد ہندوستان میں اس دستاویزی فلم کی نمائش پر امتناع عائد کیا گیا ہے ۔ آسکر ایوارڈ یافتہ اداکارہ میریل اسٹریپ، فریدہ پنٹو اور ہندوستانی ایکٹر ڈائرکٹر فرحان اختر نے اس موقع پر ہندوستان میں ممنوعہ اس دستاویزی فلم کے پریمیئر شو میں شرکت کرتے ہوئے اظہار یگانگت کیا۔ میرل اسٹریپ نے ’’اسٹوری ولے : انڈیاس ڈاٹر‘‘ کے عنوان سے تیار کی گئی اس فلم کا افتتاح کیا اور اپنے مختصر سے خطاب میں کہا کہ 23 سالہ متاثرہ خاتون دراصل ’’ہم سب کی بیٹی ‘‘ تھی۔ خواتین کیخلاف تشدد کو برداشت کرنا اور اُس پر کسی ردعمل کا اظہار نہ کرنا غیرانسانی جرم کے ارتکاب سے بھی بدتر ہے ۔ اس موقع پر پنٹو اور اختر کے علاوہ ٹاک شو میزبان ٹینا براؤن اور اقوام متحدہ کے انسانی امور کے سابق انڈر سکریٹری جنرل اور ایمرجنسی ریلیف کوآرڈنیٹر ولیری اموس بھی موجود تھے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT