Tuesday , December 11 2018

دہلی حکومت کی تشکیل پر لیفٹننٹ گورنر کا صدر جمہوریہ سے تبادلہ خیال

نئی دہلی ۔ 22مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) عام آدمی پارٹی کے دہلی میں تشکیل حکومت پر تغیر پذیر رویہ کی بناء پر لیفٹننٹ گورنر نجیب جنگ نے آج کہا کہ وہ اس مسئلہ پر صدر جمہوریہ پرنب مکرجی سے تبادلہ خیال کریں گے ۔انہوں نے واضح کردیا کہ کجریوال کی پارٹی نے ہنوز تازہ انتخابات کی خواہش نہیں کی ہے۔وہ نئی دہلی میں نئی حکومت کی تشکیل کے بارے میں سوال کا

نئی دہلی ۔ 22مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) عام آدمی پارٹی کے دہلی میں تشکیل حکومت پر تغیر پذیر رویہ کی بناء پر لیفٹننٹ گورنر نجیب جنگ نے آج کہا کہ وہ اس مسئلہ پر صدر جمہوریہ پرنب مکرجی سے تبادلہ خیال کریں گے ۔انہوں نے واضح کردیا کہ کجریوال کی پارٹی نے ہنوز تازہ انتخابات کی خواہش نہیں کی ہے۔وہ نئی دہلی میں نئی حکومت کی تشکیل کے بارے میں سوال کا جواب دے رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ اُن کی زبان بند ہے ۔ تازہ انتخابات کی کوئی تجویز ابھی وصول نہیں ہوئی ہے۔ دریں اثناء تہار جیل میںسابق چیف منسٹر اروند کجریوال نے اپنی شریک حیات اور پارٹی قائدین سے ملاقات کی ۔ عام آدمی پارٹی نے کہا کہ وہ پٹیالہ میٹرو پولیٹن عدالت کے فیصلہ کو کل چیالنج کرے گی ‘ اگر یہ فیصلہ اروند کجریوال کے خلاف ہو پارٹی نے عوامی رابطہ پروگرام کا بھی اعلان کیا ۔ پارٹی نے کہا کہ گھر گھر رابطہ پروگرام چلایا جائے گا تاکہ عوام کو ان حالات سے واقف کروایا جائے جن کے نتیجہ میں فوجداری ازالہ حیثیت عرفی مقدمہ میں کجریوال کی گرفتاری عمل میں آئی ہے ۔ پارٹی نے کہا کہ کل کے فیصلہ کے بعد پارٹی کارکنوں کا اجلاس منعقد کیا جائے گا اور عدالت کے فیصلے کے بعد آئندہ کا لائحہ عمل تیار کیا جائے گا ۔گوپال رائے نے کہا کہ پارٹی اس جنگ کو دہلی سے ملک گیر سطح پر لے جائے گی ۔

انہوں نے کہا کہ اگر کسی بدعنوان شخص کو بدعنوان قرار دینے جرم ہے تو بی جے پی کی جانب سے نتن گڈکری کو اُن کے عہدہ سے برطرف کردینا چاہیئے کیونکہ ان پر بھی بدعنوانیوں کے الزامات عائد ہے۔ انہوں نے کہا کہ اُن کے خلاف ملک گیر سطح پر مہم شروع کی جائے گی ۔ نریندر مودی نے اروند کجریوال کو پاکستان کا ایجنٹ قرار دیا ہے لیکن اُن کے خلاف کوئی ایف آئی آر درج نہیں کروائی گئی ۔ انہوں نے پولیس کارروائی کی بھی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ جنگ عوام تک پہنچائی جائے گی ۔ ہم پولیس کی آمریت کے آگے گھٹنے نہیں ٹیکینگے ۔ اروند کجریوال 23مئی تک تہار جیل بھیج دیئے گئے ہیں کیونکہ انہوں نے ہتک عزت مقدمہ میں ضمانت پر رہائی کیلئے مچلکہ داخل کرنے سے انکار کردیا ہے ۔ دریں اثناء رالے گاؤں سدی سے موصولہ اطلاع کے بموجب سماجی کارکن انا ہزارے نے کہاکہ عام آدمی پارٹی قائد اروند کجریوال کو بحیثیت چیف منسٹر دہلی اپنی میعاد پوری کرنی چاہیئے تھی ‘ وہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ اپنے سابق ساتھی سے کہہ چکے ہیں کہ انہیں دہلی کے چیف منسٹر کی حیثیت سے اپنی میعاد مکمل کرنی چاہیئے ۔ انہوں نے کہاکہ وہ کجریوال کو دہلی حکومت چلانے کے بارے میں مشورہ دے چکے ہیں اور کہہ چکے ہیں کہ دہلی کی حکومت کو باقی ملک کیلئے ایک مثال ہونا چاہیئے ۔ عام انتخابات میں مقابلہ کرنے پر عام آدمی پارٹی پر تنقید کرتے ہوئے انا ہزارے نے کہا کہ سیاست میں کامیابی کیلئے صبر و تحمل ضروری ہے ۔ کجریوا ل اناہزارے کی لوک پال تحریک میں پیش پیش تھے جو کرپشن کے خلاف تحریک میں تبدیل ہونے کے بعد کمزور پڑگئی ۔ چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال کو اُسی کمرے میں رکھا گیا ہے جس میں انا ہزارے رکھے گئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT