دہلی میں خاتون پر حملہ ‘ہیڈ کانسٹبل برطرف

نئی دہلی 11 مئی (سیاست ڈاٹ کام ) پولیس ظلم کا انتہائی افسوسناک واقعہ منظر عام پر آیا جس میں دہلی پولیس سے وابستہ ہیڈ کانسٹیبل نے پاش وسطی دہلی میں ایک خاتون پر اینٹ سے حملہ کردیا ۔ اس واقعہ کے خلاف عوامی برہمی کے بعد کانسٹیبل کو خدمات سے برطرف کردیا گیا ۔ ٹریفک پولیس سے وابستہ ہیڈ کانسٹیبل ستیش چندر کو گرفتار کر کے فوجداری مقدمہ درج کیا گیا ۔ گولف لنک علاقہ میں ایک نوجوان خاتون اور اس کے دو بچوں پر حملے کی ویڈیو کلپ تیزی سے پھیل گئی جس کے ساتھ ہی حکومت نے فوری حرکت میں آتے ہوئے اسے خدمات سے برطرف کردیا ۔ متاثرہ خاتون جو ٹو وہیلر چلا رہی تھی ‘ بتایا کہ ستیش چندرا نے ٹریفک قواعد کی خلاف ورزی پر اس سے 200 روپئے رشوت طلب کی جب اس نے دینے سے انکار کیا تو وہ تشدد پر اتر آیا اور ایک اینٹ سے اس پر حملہ کردیا ۔ ویڈیو کلپ میں خاتون کو اینٹ اٹھاکر پولیس کی بائیک پر پھینکتے ہوئے دکھایا گیا جبکہ کانسٹیبل کو دوسری اینٹ سے خاتون پر حملہ کرتے ہوئے بتایا گیا ہے ۔ طبی معائنہ کے بعد خاتون نے کہا کہ اس کے بائیں ہاتھ میں فریکچر آگیا ہے ۔ اس واقعہ کے خلاف سیاسی جماعتوں اور خواتین تنظیموں نے شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے ۔ دہلی پولیس کمشنر بی ایس بسی نے اس واقعہ پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ دہلی پولیس کی طرف سے اس خاتون سے معذرت خواہ ہیں انہوں نے کہا کہ سارے واقعہ کی تحقیقات کرتے ہوئے موثر کارروائی کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT