Wednesday , September 26 2018
Home / ہندوستان / دہلی میں مہربندی کے مسئلہ پر اسمبلی میں ہنگامہ آرائی

دہلی میں مہربندی کے مسئلہ پر اسمبلی میں ہنگامہ آرائی

اجلاس چار مرتبہ ملتوی، بی جے پی ارکان مارشلوں نے باہر نکال دیا
نئی دہلی ۔ 15 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) دہلی اسمبلی میں آج حکمراں عام آدمی پارٹی (عاپ) اور اپوزیشن بی جے پی کے ارکان کے درمیان شہر میں جاری مہربندی کے مسئلہ پر نعرہ بازی اور الزامات کے تبادلے کے سبب صرف دو گھنٹے کے دوران چار مرتبہ ایوان کی کارروائی ملتوی کی گئی۔ مارشلوں نے بی جے پی کے دو ارکان کو ایوان سے باہر نکال دیا۔ اجلاس کے آغاز پر عام آدمی پارٹی کے ارکان اسمبلی ایوان کے وسط میں پہنچ گئے اور جائیدادوں کے خلاف جاری مہم پر بحث کا مطالبہ کیا۔ اپوزیشن لیڈر وجیندر گپتا کی قیادت میں بی جے پی ارکان جوابی احتجاج پر اتر آئے۔ انہوں نے کہا کہ 351 لڑکوں کی اراضی کے استعمال کے موقف سے بالخصوص تاجرین بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔ حکمراں اور اپوزیشن ارکان کے درمیان نعرہ بازی کے نتیجہ میں ایوان کی کارروائی روک دی گئی۔ اسپیکر رام نواس گوئیل نے تین مرتبہ فی کس 15 منٹ اور چوتھی مرتبہ 30 منٹ کیلئے ایوان کی کارروائی ملتوی کردی۔ ایوان کی کارروائی 4:15 بجے شام چوتھی مرتبہ شروع ہوئی۔ ڈپٹی چیف منسٹر منیش سیسوڈیا اس مسئلہ پر کچھ کہنے کیلئے اٹھے لیکن گپتا اور بی جے پی کے ایک اور رکن مجندر سنگھ سرسہ نے سڑکوں کے موضوع پر بحث کیلئے اصرار کیا جس پر انہیں ایوان سے باہر نکالنے کیلئے مارشل کو حکم دینے کیلئے مجبور ہونا پڑا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT