Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / دہلی میں گرفتار حیدرآبادی نوجوان کو ضمانت

دہلی میں گرفتار حیدرآبادی نوجوان کو ضمانت

رحمت پاشاہ کو داعش سے روابط اور غیرقانونی اسلحہ ساتھ رکھنے پر گرفتارکیا گیا تھا
نئی دہلی ۔ 18 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) دہلی کی ایک عدالت میں حیدرآباد کے ایک نوجوان رحمت پاشاہ کو ضمانت دے دی جسے مبینہ طور پر خوفناک دہشت گرد تنظیم داعش کے بارے میں جہادی ویب سائیٹ پر چیاٹنگ میں ملوث ہونے اور اپنے قبضہ میں اسلحہ رکھنے پر گرفتار کیا گیا تھا۔ چیف میٹرو پولیٹن مجسٹریٹ سنجے کھنگوال نے 28 سالہ محمد رحمت پاشاہ کو 25 ہزار روپئے کے شخصی مچلکہ اور اس کے مساوی رقم پر ضمانت دی۔ دہلی پولیس کے خصوصی سیل نے رحمت پاشاہ کو بیرون نئی دہلی ریلوے اسٹیشن پر 5 اکٹوبر کو گرفتار کیا تھا جب مبینہ طور پر اس کے قبضہ میں 9 کارتوس کے ساتھ دو دیسی ساختہ پستول پائے گئے تھے۔ پولیس ذرائع کے مطابق رحمت پاشاہ آئی ایس آئی ایس کے بارے میں مختلف جہادی ویب سائیٹس پر چیاٹنگ کیا کرتا تھا لیکن دوران تحقیقات پتہ چلا کہ اس خوفناک تنظیم سے اس کا کوئی تعلق نہیں ہے۔ پاشاہ کے خلاف دائر کردہ ایف آئی آر میں پولیس نے الزام عائد کیا تھا کہ وہ مشتبہ طور پر ملک دشمن اور مجرمانہ سازشوں میں ملوث ہے لیکن درخواست ضمانت پر عدالتی میں بحث کے دوران ملزم کے وکیل ایم ایس خان نے دلیل پیش کی کہ ان کا موکل صاف ستھرے ریکارڈ کا حامل ہے اور ماضی میں کبھی بھی کسی بھی جرم میں ملوث نہیں رہا ہے۔ ایم ایس خان نے مزید کہا کہ رحمت پاشاہ کو قانونی اسلحہ کے تحت درج کردہ مقدمہ کے ضمن میں گرفتار کیا گیا تھا اور اس سے مزید پوچھ گچھ کی کوئی ضرورت نہیں ہے بلکہ فوراً ضمانت پر رہا کیا جانا چاہئے۔ پولیس نے یہ کہتے ہوئے ضمانت کی مخالفت کی کہ اس کے قبضہ سے غیرقانونی اسلحہ اور کارتوس برآمد ہوئے تھے۔ پولیس نے کہاکہ اترپردیش کے رائے بریلی سے پاشاہ کے دہلی پہنچنے کی خفیہ اطلاع پر اس کو نئی دہلی ریلوے اسٹیشن پر اے پی ایکسپریس سے گرفتار کیا گیاتھا۔

TOPPOPULARRECENT