Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / دہلی ہائیکورٹ پر احتجاجی مظاہرہ نجیب کی والدہ گرفتار

دہلی ہائیکورٹ پر احتجاجی مظاہرہ نجیب کی والدہ گرفتار

نئی دہلی ۔16 اکٹوبر۔( سیاست ڈاٹ کام) جواہر لعل نہرو یونیورسٹی ( جے این یو) کے لاپتہ طالب علم نجیب احمد کی والدہ اور دیگر 30 افراد کو جن میں طلبہ کی اکثریت تھی دہلی پولیس نے ہائیکورٹ کے باہر احتجاج کے دوران حراست میں لے لیا۔ اس مقدمہ کی تحقیقات میں مبینہ غفلت و لاپرواہی پر سی بی آئی کو دہلی ہائیکورٹ بنچ کی سخت سرزنش کا سامنا کرنا پڑا ، نجیب احمد کی والدہ فاطمہ نفیس اس یونیورسٹی کے طلبہ کے ساتھ احتجاج کررہی تھیں اور عدالت کے احاطہ میں داخل ہونے کی کوشش کے دوران انھیں حراست میں لے لیاگیا ۔ ڈپٹی کمشنر پولیس ( نئی دہلی) بی کے سنگھ نے کہاکہ ’’تقریباً 35 احتجاجیوں کو حراست میں لے لیا گیا ۔ اُن میں نجیب کی والدہ بھی شامل ہیں‘‘ ۔ انھوں نے کہاکہ ان تمام کو بارہ گھما روڈ پولیس اسٹیشن منتقل کیا گیا ۔ جے این یو اسٹوڈنٹس یونین کے سابق صدر مہت کمار پانڈے نے الزام عائد کیا کہ ’’دہلی پولیس افسران نے نفیس سے کہاکہ ان کے پاس صرف اس ایک کیس کی تحقیقات ہی نہیں ہیں اور انھوں نے دوران حراست اس خاتون کو بری طرح زدوکوب کیا‘‘۔

TOPPOPULARRECENT