Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / دیسی مرغیوں کو بھی اینٹی بائیوٹیک ادویات سے جسامت بڑھایا جارہا ہے

دیسی مرغیوں کو بھی اینٹی بائیوٹیک ادویات سے جسامت بڑھایا جارہا ہے

برائیلر کے بعد دیسی مرغ بھی مضر صحت ، نگرانی کے لیے حکومت سے ادارہ کے قیام کی ضرورت
حیدرآباد۔21ڈسمبر(سیاست نیوز) چکن میں پائے جانے والے آئینٹی بائیوٹیک کی مقدار کو دیکھتے ہوئے اب ریاست کے شہری علاقو ںمیں آرگینک چکن کی اصطلاح استعمال کی جانے لگی ہے اب تک بھی ریاست تلنگانہ میں کوئی ادارہ ایسا نہیں ہے جو آرگینک چکن کو مستند قرار دے سکے لیکن فی الحال ریاست میں دیسی مرغی کو آرگینک چکن قرار دیتے ہوئے فروخت کیا جا رہاہے جبکہ برائیلر میں استعمال کئے جانے والے آئینٹی بائیوٹیک سے مرغ کے ہارمونس پر واضح اثرات نمایاں ہونے لگے ہیں جس کی وجہ سے لوگ اس کے استعمال سے اجتناب کرنے لگے ہیں۔ سابق میں بھی ادارہ سیاست نے مختلف مطالعاتی رپورٹس کی بنیاد پر اس بات کا انکشاف کیا تھا کہ زیادہ چکن کا استعمال کرنے والوں پر ادویات اثر کرنا بند کردیتی ہیں اور خاص طور پر آئینٹی بائیوٹیک ادویات کا استعمال ان کے لئے تکلیف کا سبب بننے لگتا ہے۔گذشتہ دنوں منظر عام پر آئی رپورٹ کے مشاہدہ سے اس بات کا پتہ چلا ہے کہ اب دیسی مرغ کو بھی جلد سے جلد بڑا کرنے کیلئے اسے بھی آئنٹی بائیوٹیک ادویات دی جانے لگی ہیں تاہم اب بھی اس دیسی مرغی کو شہری علاقوں میں آرگینک تصور کیا جا رہا ہے۔ چکن کے استعمال سے ہونے والی بیماریوں میں کئی ایک بیماریوں کا تذکرہ کیا جاچکا ہے لیکن اب جو صورتحال پیدا ہورہی ہے وہ انتہائی خطرناک نوعیت کی ہونے لگی ہے۔ آرگینک مرغ فروخت کرنے والے حقیقی تاجرین کا کہناہے کہ ان مرغیوں کی پرورش کے لئے کافی وقت درکار ہوتا ہے اور انہیں قدرتی غذاء کھانے کیلئے چھوڑ دیا جاتا ہے اور جو غذاء انہیں فراہم کی جاتی ہے وہ بھی قدرتی ہوتی ہے لیکن ریاست میں کوئی بھی ادارہ ان کے آرگینک ہونے کی سند فراہم کرنے والا نہیں ہے اسی لئے مرغی پالتے ہوئے بازار میں فروخت کرنے والے کسانوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہاہے کیونکہ ان کی جانب سے پرورش کردہ آرگینک مرغی کو بھی نقلی تصور کیا جانے لگا ہے اور بعض علاقوں میں دیسی مرغی کو بھی آئینٹی بائیوٹیک ادویات کے ذریعہ جلد بڑھانے کی کوشش کی جا رہی ہے جو مضر صحت ہیں ۔ اس کا اندازہ نہیں کیا جارہا ہے۔ شہری علاقو ں میں آرگینک چکن اور گوشت کے استعمال کے بڑھتے رجحان کو دیکھتے ہوئے حکومت کی جانب سے بہت جلد کسی ایسے ادارہ کے قیام کی منصوبہ بندی کئے جانے کا امکان ہے جو آرگینک مچھلی ‘ مرغی اور گوشت کو سند فراہم کرنے کا مجاز ہو۔ بتایاجاتاہے کہ برائیلر کے استعمال میں آنے والی تخفیف اور دیسی مرغ کے استعمال میں ہونے والا اضافہ کوئی قابل لحاظ اضافہ ریکارڈ نہیں کیا جا رہاہے لیکن آرگینک کے استعمال میں بتدریج ہونے والے اضافہ کو دیکھتے ہوئے ایسے ادارہ کی ضرورت شدت سے محسوس کی جا رہی ہے جو آرگینک مرغ ‘ مچھلی اور گوشت کی توثیق کرتے ہوئے اسے سند فراہم کرسکے۔

TOPPOPULARRECENT