Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / دینی مدرسوں میں اُردو طلباء کی مادری زبان ، شیوسینا نا واقف:نجمہ

دینی مدرسوں میں اُردو طلباء کی مادری زبان ، شیوسینا نا واقف:نجمہ

The Union Minister for Minority Affairs, Dr. Najma A. Heptulla in a group photograph at the 72nd meeting of the Central Waqf Council (CWC), in New Delhi on January 21, 2016.

نئی دہلی ۔ /21 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی وزیر برائے اقلیتی امور نجمہ ہبت اللہ نے آج شیوسینا کے دینی مدرسوں میں اُردو اور عربی ذریعہ تعلیم پر امتناع عائد کرنے کے مطالبہ کی اہمیت کم کرتے ہوئے کہا کہ بھگوا پارٹی اس حقیقت سے نا واقف ہے کہ اُردو دینی مدرسوں میں زیرتعلیم طلباء کی مادری زبان ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ شیوسینا کے قائدین سے اس بارے میں بات چیت کریں گی ۔ انہوں نے کہا کہ عربی دینی مدارس میں اس لئے پڑھائی جاتی ہے کیونکہ قرآن شریف عربی زبان میں ہے ۔ شیوسینا کے ارکان یہ بات نہیں سمجھتے ۔ یہ ایک ترسیل کا المیہ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT