دین دیال کے ساتھ ہمیں گاندھی اور لوہیا بھی منظور: مودی

بھوپال۔ 25 ۔ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیر اعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو پنڈت دین دیال اپادھیائے کے ساتھ مہاتما گاندھی اور رام منوہر لوہیا بھی منظور ہیں۔ مسٹر مودی نے بھوپال کے جنبوري میدان میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ریاستی کارکن مھاکمبھ میں تقریبا 40 منٹ کے اپنے خطاب میں یہ اظہار خیال کیا۔ اس موقع پر بی جے پی صدر امت شاہ، مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان، بی جے پی ریاستی صدر راکیش سنگھ سمیت مرکز اور ریاست کے سینئر بی جے پی لیڈران موجود تھے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ملک کی کوئی بھی پارٹی ہو، تین عظیم ہستیوں مہاتما گاندھی، رام منوہر لوہیا اور دین دیال اپادھیائے کے خیالات پر ہی سیاست کرتی ہے ۔ ان کے خیالات کے بغیر آپ نہیں چل سکتے ۔ ملک کی ترقی اور فلاح و بہبود کے لئے ان کے خیالات سے رہنمائی حاصل ہوتی ہے ۔ انہوں نے دوسری پارٹیوں کو نصیحت کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کو تینوں ہستیاں منظور ہیں، کیونکہ ان کی پارٹی کو آرڈنیشن میں یقین رکھتی ہے ۔ مسٹر مودی نے درج فہرست ذات و قبائل انسداد مظالم ایکٹ کا ذکر کئے بغیر کہا کہ ” اعلی ذات اور پسماندہ طبقات میں امتیاز سے ملک کا بھلا نہیں ہوگا۔ ملک کی ترقی میں کوئی طبقہ پیچھے نہیں چھوٹے ۔ ہر طبقہ اقتصادی، سماجی طور پر بااختیار ہو، اسی لئے ہم منصوبے بنا رہے ہیں۔ ‘سب کا ساتھ، سب کا وکاس’ کے ہمارے نعرے کے پیچھے بھی یہی خیال کارفرما ہے ۔

TOPPOPULARRECENT