Thursday , January 18 2018
Home / Top Stories / دیویانی کیس کی برخاستگی پر امریکی انتظامیہ حیرت زدہ

دیویانی کیس کی برخاستگی پر امریکی انتظامیہ حیرت زدہ

واشنگٹن ، 14 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اوباما نظم و نسق نے ہندوستانی سفارت کار دیویانی کھوبرگاڑے کے خلاف ویزا دھوکہ دہی کیس میں وفاقی سرزنش کو خارج کردینے پر حیرت کا اظہار کیا ہے۔ ’’ہم سابق انڈین ڈپٹی قونصل جنرل دیویانی کھوبرگاڑے کے خلاف سرزنش کو ختم کردینے پر حیرت زدہ ہیں،‘‘ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی ترجمان جین ساکی نے یہ بات کہی، جبکہ نیویار

واشنگٹن ، 14 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اوباما نظم و نسق نے ہندوستانی سفارت کار دیویانی کھوبرگاڑے کے خلاف ویزا دھوکہ دہی کیس میں وفاقی سرزنش کو خارج کردینے پر حیرت کا اظہار کیا ہے۔ ’’ہم سابق انڈین ڈپٹی قونصل جنرل دیویانی کھوبرگاڑے کے خلاف سرزنش کو ختم کردینے پر حیرت زدہ ہیں،‘‘ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی ترجمان جین ساکی نے یہ بات کہی، جبکہ نیویارک کی عدالت نے دیویانی کے خلاف سرزنش کو کالعدم کئے ایک روز ہوا ہے۔ دیویانی نے جن کی گرفتاری اور جامہ تلاشی سے ہند۔ امریکہ تعلقات میں تلخی پیدا ہوئی، کل اپنے خلاف کیس کی برخاستگی کے ساتھ کامیاب ہوئیں جبکہ امریکی جج نے رولنگ دی کہ انھیں مکمل سفارتی استثنا حاصل تھا۔

تاہم اس رولنگ نے یہ امکان کھلا چھوڑا ہے کہ امریکی پراسکیوٹرز دیویانی کے خلاف نئی سرزنش کی کارروائی شروع کرسکتے ہیں۔ جارج ابراہم، چیرمین انڈین نیشنل اوورسیز کانگریس (I) امریکہ نے دیویانی کے خلاف سرزنش خارج کردینے کے فیصلے کا خیرمقدم کیا ہے۔ انھوں نے ایک بیان میں کہا، ’’اس کیس کے محاسن چاہے کچھ ہوں، یہ امریکہ۔ ہندوستان رشتے کیلئے بڑا دردسر بن چکا ہے اور معمول کے حالات کی بحالی کیلئے کچھ تو ہونا ہی تھا‘‘۔ ابراہم نے کہا کہ ہند۔ امریکہ کلیدی شراکت داری اور تعلقات عالمی پس منظر میں اتنے اہم ہیں کہ کسی ویزا مسئلے پر تنازعہ کے سبب منجمد نہیں کئے جاسکتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT