دیویندر فرنویس مہاراشٹرا میں بی جے پی کے پہلے چیف منسٹر ہونگے

ممبئی 28 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) کئی دن سے جاری تجسس کو ختم کرتے ہوئے آج دیویندر فرنویس کو مہاراشٹرا میں بی جے پی مقننہ پارٹی کا لیڈر منتخب کرلیا گیا اور وہ جمعہ 31 اکٹوبر کو مہاراشٹرا کے پہلے بی جے پی چیف منسٹر کی حیثیت سے حلف لیں گے ۔ ان کی حکومت کو این سی پی کی باہر سے تائید حاصل رہے گی ۔ 44 سالہ فرنویس چوتھی مرتبہ ناگپور ساؤتھ ویسٹ نشس

ممبئی 28 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) کئی دن سے جاری تجسس کو ختم کرتے ہوئے آج دیویندر فرنویس کو مہاراشٹرا میں بی جے پی مقننہ پارٹی کا لیڈر منتخب کرلیا گیا اور وہ جمعہ 31 اکٹوبر کو مہاراشٹرا کے پہلے بی جے پی چیف منسٹر کی حیثیت سے حلف لیں گے ۔ ان کی حکومت کو این سی پی کی باہر سے تائید حاصل رہے گی ۔ 44 سالہ فرنویس چوتھی مرتبہ ناگپور ساؤتھ ویسٹ نشست سے اسمبلی کیلئے منتخب ہوئے ہیں۔ وہ آر ایس ایس سے قریبی تعلقات رکھتے ہیں اور وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی کے صدر امیت شاہ کی انہیں زبردست تائید حاصل رہی تھی ۔ فرنویس مہاراشٹرا کے دوسرے برہمن چیف منسٹر ہونگے ۔ اس سے قبل شیوسینا کے منوہر جوشی کو یہ عہدہ دیا گیا تھا ۔ فرنویس کو آج بی جے پی مقننہ پارٹی کا لیڈر منتخب قرار دیا گیا ۔ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے ان کے انتخاب کا اعلان کیا ۔ فرنویس نے اس مقابلہ میں کئی سینئر بی جے پی قائدین اور ریاستی بی جے پی کور کمیٹی قائدین کو پیچھے چھوڑ دیا جو یہ عہدہ حاصل کرنے کی کوشش کر رہے تھے ۔ ان تمام دعویداروں کو پارٹی کی مرکزی قیادت نے خاموش کروادیا ۔

بعد ازاں بی جے پی جنرل سکریٹری راجیو پرتاپ روڈی ‘ مرکزی وزیر پرکاش جاودیکر ‘ مہاراشٹرا بی جے پی کور کمیٹی ارکان ایکناتھ کھڈسے اور ونود تاؤڑے کے علاوہ حلیف جماعت آر پی آئی کے لیڈر رام داس اٹھاؤلے اور آر ایس پی کے مہادیو جنکر کے ساتھ فرنویس نے گورنر مہاراشٹرا سی ایچ ودیاساگر راؤ سے ملاقات کی اور ریاست میں حکومت سازی کا ادعا پیش کیا ۔ فرنویس نے گورنر سے ملاقات کے بعد اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے گورنر کو ایک مکتوب حوالے کرتے ہوئے ریاست میں بی جے پی حکومت بنانے کا موقع دینے کی اپیل کی ہے ۔ گورنر نے تشکیل حکومت کا ادعا قبول کرتے ہوئے ہمیں تقریب حلف برداری سے اندرون 15 یوم اسمبلی میں اپنی اکثریت ثابت کرنے کی ہدایت دی ہے ۔ تقریب حلف برداری 31 اکٹوبر جمعہ کو ہوگی ۔

مہاراشٹرا کے انچارچ بی جے پی جنرل سکریٹری جے پی ندا نے کہا کہ تقریب حلف برداری جمعہ کو شام 4 بجے منعقد ہوگی اور سابقہ حلیف شیوسینا کے ساتھ ایک مخلوط حکومت بنانے کے تعلق سے ابھی بھی بات چیت چل رہی ہے ۔ نو منتخب ارکان اسمبلی کے اجلاس میں سابقہ اسمبلی میں قائد اپوزیشن ایکناتھ کھڈسے نے مسٹر فرنویس کا نام پیش کیا اور دوسروں نے اس کی تائید کی جن میں ونود تاوڑے ‘ سابق ریاستی بی جے پی سربراہ سدھیر منگنتیوار اور کور کمیٹی رکن پنکجا منڈے پالوے شامل ہیں۔ ان کے انتخاب کی قرارداد متفقہ طور پر پیش کی گئی ۔ راج ناتھ سنگھ نے اجلاس کے بعد یہ بات بتائی جس سے قبل بی جے پی کور کمیٹی کا اجلاس ہوا ۔ فرنویس اور دوسرے ارکان بعد ازاں راج بھون گئے اور تشکیل حکومت کا ادعا پیش کیا ۔ گورنر نے یہ ادعا قبول کرلیا اور انہیں تشکیل حکومت کی دعوت دی ہے ۔

حکومت 31 اکٹوبر کو حلف لے گی ۔ کہا گیا ہے کہ حلف برداری کی تقریب وانکھیڈے اسٹیڈیم میں منعقد ہوگی جس میں وزیر اعظم نریندر مودی ‘ ان کی کابینہ کے رفقا ‘ بی جے پی اقتدار والی ریاستوں کے چیف منسٹرس اور دوسرے شرکت کرینگے ۔ مسٹر ندا نے بتایا کہ 31 اکٹوبر کو ایک مختصر سی کابینہ حلف لے گی ۔ سابق حلیف جماعت شیوسینا نے کل کہا تھا کہ وہ بی جے پی زیر قیادت حکومت میں شامل ہونے تیار ہے تاہم اس نے آج کہا کہ وہ حکومت کی تائید کرنے یا نہ کرنے کے مسئلہ پر چیف منسٹر کی حلف برداری کے بعد کوئی فیصلہ کریگی ۔ شیوسینا نے میڈیا کی ان اطلاعات کو بھی مسترد کردیا کہ شیوسینا نے ڈپٹی چیف منسٹر کا عہدہ طلب کیا ہے ۔ پارٹی ترجمان سنجے راوت نے آج پارٹی صدر ادھو ٹھاکرے سے ملاقات کے بعد اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ میڈیا میں اس تعلق سے غلط بیانی کی جا رہی ہے

TOPPOPULARRECENT