Sunday , September 23 2018
Home / مذہبی صفحہ / ذکر اللہ کی برکت

ذکر اللہ کی برکت

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد ہے کہ ’’دو چیزیں ایسی ہیں، جو مسلمان ان کا اہتمام کرے تو وہ جنت میں داخل ہو۔ وہ دونوں چیزیں بہت معمولی ہیں، مگر ان پر عمل کرنے والے بہت کم ہیں۔ ایک یہ کہ سبحان اللّٰہ، الحمد للّٰہ اور اللّٰہ اکبر ہر نماز کے بعد دس دس مرتبہ پڑھ لیا کرے، اس طرح روزانہ پانچوں نمازوں میں ایک سو پچاس مرتبہ ہو جائے گا اور دس گنا ہو جانے کی وجہ سے پندرہ سو نیکیاں شمار کی جائیں گی‘‘۔ ارشاد باری تعالیٰ ہے کہ ’’جو شخص ایک نیکی لے کر آئے گا، اس کو دس گنا اجر ملے گا اور جو شخص بُرائی لے کر آئے گا اس کو اس کے برابر ہی سزا ملے گی اور اس پر ظلم نہ ہوگا‘‘۔ (سورۃ الانعام)
دوسری چیز یہ کہ سوتے وقت سبحان اللّٰہ ۳۳ مرتبہ، الحمد للّٰہ ۳۳ مرتبہ اور اللّٰہ اکبر ۳۴ مرتبہ پڑھ لیا کرے تو سو کلمے ہو گئے، جن کا ثواب ایک ہزار نیکیاں ہوں گی، جو کل ملاکر دو ہزار پانچ سو نیکیاں ہو گئیں۔

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے جب اپنی شفقت سے برائیوں پر نیکیوں کے غالب آجانے کا آسان نسخہ ارشاد فرمایا تو صحابہ کرام نے عرض کیا: ’’یارسول اللہ! یہ دونوں چیزیں اتنی سہل اور آسان ہونے کے باوجود ان کے کرنے والے بہت کم ہیں‘‘۔ آپﷺ نے فرمایا: ’’جب سونے کا وقت ہوتا ہے تو شیطان ان (کلمات) کے پڑھنے سے پہلے ہی سلادیتا ہے اور نماز کا وقت ہوتا ہے تو وہ کوئی ایسی بات یاد دِلاتا ہے کہ پڑھنے سے پہلے ہی (بندہ) اُٹھ کر چلاجائے‘‘۔
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ’’سبحان اللّٰہ سو مرتبہ پڑھو، ہزار نیکیوں کا ثواب ملے گا‘‘۔ آپﷺ نے فرمایا: ’’دو کلمے ایسے ہیں کہ زبان پر بہت ہلکے، ترازو میں بہت وزنی اور اللہ کے نزدیک بہت محبوب ہیں۔ وہ ہیں سبحان اللّٰہ وبحمدہٖ سبحان اللّٰہ العظیم‘‘۔
(مرسلہ)

TOPPOPULARRECENT